مسجد الحرام میں دھوپ سے بچاؤ کے لیے چھتریاں

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption عرب نیوز کے مطابق یہ چھتریاں 2,75,000 مربع میٹر پر پھیلے ہوئے مسجد کے صحن میں سایہ فراہم کریں گی

اطلاعات کے مطابق سعودی عرب میں دنیا کی سب سے بڑی مسجد، مسجد الحرام میں میں نمازیوں کو دھوپ سے بچانے کے لیے بڑی چھتریاں نصب کی جائیں گی۔

عرب نیوز اخبار کی ویب سائٹ کے مطابق مکہ میں واقع مسجد الحرام کے باہر والے صحن میں سایہ فراہم کرنے کے لیے 300 سے زائد بڑی چھتریاں نصب کی جائیں گی۔

عرب نیوز کے مطابق یہ چھتریاں 2,75,000 مربع میٹر پر پھیلے ہوئے مسجد کے صحن میں سایہ فراہم کریں گی۔

ویب سائٹ کے مطابق اس منصوبے کی منظوری سعودی عرب کے بادشاہ عبداللہ نے دی۔

عرب نیوز کی ویب سائٹ کے مطابق ایسی چھتریاں مدینہ میں واقع مسجدِ نبوی میں پہلے ہی نصب ہیں۔

مسجد نبوی میں لگی یہ چھتریاں موسمِ گرما کے دوران دن کے وقت کھل جاتی ہیں اور رات کو بند ہو جاتی ہیں۔ یہ پورا عمل صرف تین منٹ میں مکمل ہو جاتا ہے۔

سعودی عرب کے حکام دنیا کی اس سب سے بڑی مسجد کو گرمی میں ٹھنڈا اور سردیوں میں گرم رکھنے کے لیے ایک چھت بنانے کے ڈیزائن پر کام کر رہے ہیں۔

خانہ کعبہ کو مسلمانوں کا سب سے مقدس مقام سمجھا جاتا ہے اور ہر سال لاکھوں افراد خانہ کعبہ کی زیارت اور عبادات کے لیے آتے ہیں جبکہ حج کے ایام میں یہ تعداد اور بھی زیادہ ہوتی ہے۔

اسی بارے میں