کیری اسرائیلی قبضے کے خاتمے پر بات چیت کریں گے

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption اسرائیل نے امریکہ سے یہ یقین دہانی حاصل کر لی ہے کہ وہ ان دونوں قراردادوں کو ویٹو کر دے گا

امریکی وزیرِ خارجہ جان کیری منگل کو لندن میں فلسطین کے مرکزی مذاکرات کار کے ساتھ ملاقات کریں گے جس میں اسرائیل کی جانب سے قبضہ کیے جانے والے فلسطینی علاقے خالی کرنے کے ٹائم ٹیبل پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

امید کی جا رہی کہ جان کیری فلسطینی مذاکرات کار صائب عریقات سے استدعا کریں گے کہ وہ اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل میں پیش کیے جانے والے مسودے، جس میں اسرائیل سے کہا گیا ہے کہ وہ نومبر سنہ 2016 تک فلسطینی علاقوں کو خالی کر دے، پر رائے شماری کے لیے زور نہ دیں۔

ایک علیحدہ مسودہ حتمی امن معاہدے کے لیے دو سال کی مہلت مقرر کرے گا۔

دوسری جانب اسرائیل نے امریکہ سے یہ یقین دہانی حاصل کر لی ہے کہ وہ ان دونوں قراردادوں کو ویٹو کر دے گا۔

اسرائیلی وزیرِ اعظم بنیامن نیتن یاہو نے پیر کو واشنگٹن میں جان کیری سے ملاقات کے بعد کہا ’مجھے اس بات کی کوئی وجہ نظر نہیں آتی کہ واشنگٹن اسرائیل کے گذشتہ 47 سالوں کی موقف کی حمایت کیوں نہیں کرے گا کہ تنازعے کا حل مذاکرات کے لیے حاصل کیا جائے گا۔‘

امریکی وزیرِ خارجہ روم کے دورے کے بعد پیرس سے ہوتے ہوئے لندن پہنچے جہاں وہ منگل کو فلسطین کے چیف مذاکرات کار صائب عریقات کے علاوہ عرب لیگ کے ایک وفد جس میں سیکریٹری جنرل نبیل الا عرابی اور ٹونی بلیئر شامل ہیں سے ملاقات کریں گے۔

خیال رہے کہ اردن نے گذشتہ ماہ اقوامِ متحدہ میں اس مسودے کو پیش کیا تھا اور فلسطینی حکام کا کہنا ہے کہ وہ مسودے پر رائے شماری کے لیے زور دیں گے۔

اقوامِ متحدہ میں فلسطین کے نمائندے ریاض منصور نے کہا ہے کہ یہ مسودہ بدھ کو پیش کیا جائے گا اور اس پر زیادہ سے زیادہ 24 گھنٹوں یا اس کے بعد رائے شماری ہو گی۔

دوسری جانب اقوامِ متحدہ میں اردن کی نمائندہ دینا خاور کا کہنا ہے کہ انھیں امید نہیں ہے کہ اس پر رواں ہفتے کوئی پیش رفت ہو گی۔

اسی بارے میں