سیئیرا لیون: شمالی علاقوں کو تین روز کے لیے بند کردیا گیا

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption عالمی ادارہ صحت کے مطابق مغربی افریقہ میں ایبولا وائرس سے 7500 افراد ہلاک ہو چکے ہیں اور سیئیرا لیون سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے

افریقی ملک سیئیرا لیون نے ایبولا وائرس پر قابو پانے کے لیے ملک کے شمالی علاقوں کو کم از کم تین روز کے لیے بند کردیا ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ ان علاقوں میں دکانیں اور تجارتی مراکز سفری سروسز کو بند کردیا گیا ہے۔

اس سے قبل حکام نے کرسمس کی تقریبات پر بھی پابندی عائد کر دی تھی۔

عالمی ادارہ صحت کے مطابق مغربی افریقہ میں ایبولا وائرس سے 7500 افراد ہلاک ہو چکے ہیں اور سیئیرا لیون سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے۔

یاد رہے کہ سیئیرا لیون میں اب تک 9000 ایبولا کے کیسز سامنے آئے ہیں اور 2400 افرد ہلاک ہو چکے ہیں۔

سیئیرا لیون کے علاوہ لائبیریا اور گنی بھی ایبولا سے متاثر ہوئے ہیں۔

سیئیرا لیون کے شمالی علاقہ جات کے وزیر علی کمارا نےفرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کو بتایا کہ زیادہ تر عوامی تقریبات منسوخ کردی جائیں گی۔

’مسلمانوں اور عیسائیوں کو تین روز کے لیے مساجد اور گرجوں میں اجتماع نہیں کرنے دیا جائے گا۔ تاہم عیسائیوں کو صرف کرسمس پر چرچ جانے کی اجازت ہو گی۔‘

ان کا مزید کہنا تھا کہ تین روز کے لیے کوئی گاڑی بلا اجازت سڑک پر نہیں آئے گی ماسوائے ان گاڑیوں کے جو ایبولا کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے کام کر رہی ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ یہ بندش تین روز کے لیے ہے لیکن اس کو بعد میں بڑھائے جانے کے امکانات بھی ہیں۔

اسی بارے میں