یونان سے اٹلی جانے والی کشتی میں آگ لگ گئی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یونانی کوسٹ گارڈز دور سے کشتیوں پر نظر رکھے ہوئے ہیں

یونان سے اٹلی جانے والی ایک بڑی کشتی میں اتوار کو آتش زدگی کے بعد اسے خالی کرنے کا حکم دے دیا گیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق اس کشتی میں ساڑھے چار سو سے زیادہ مسافر سوار تھے۔

نارمن اٹلانٹک نامی اس کشتی پر سوار مسافروں نے یونان کے ٹیلی ویژن سٹیشنوں کو فون کر کے بتایا کہ خراب موسم اور طغیانی امدادی کارروائیوں میں حائل ہے۔

یونانی کوسٹ گارڈ کے حکام نے بتایا کہ نارمن اٹلانٹک مغربی یونان کے پیٹراز ساحل سے اطالوی بندرگاہ اینکونا جا رہی تھی اور اس نے خطرے کے سگنل بھیجے۔ اس وقت وہ اوتھونی جزیرے سے 33 ناٹیکل میل کے فاصلے پر تھی۔

اطالوی میڈیا کا کہنا ہے کہ مسافر بردار کشتی کے انجن میں آگ لگ گئی ہے۔

دریں اثنا اس کشتی کے آس پاس موجود کشتیوں کو کہا گیا ہے کہ اس میں موجود مسافروں کی امداد کریں۔

خبررساں ادارے اے پی کے مطابق مرچنٹ میرین کے وزیر ملتیادس واروتسیوتس نے کہا کہ ابھی تک 35 لوگوں کو بچایا جا چکا ہے، تاہم امدادی کوششوں کو مشکلات درپیش ہیں کیونکہ موسم خراب ہے اور سمندر میں تلاطم ہے۔

انھوں نے بتایا کہ اچھی بات یہ ہے کہ اس علاقے میں بہت سی کشتیاں ہیں اور امید کی جاتی ہے کہ لوگوں کو بچا لیا جائے گا۔

رواں سال جنوری میں کوسٹ کونکورڈیا نامی ایک بحری جہاز گگلو آئی لینڈ کے ساحل کے نزدیک سمندر میں ریت کے ایک بڑے ٹیلے سے ٹکرا گیا تھا جس میں چھ افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

اسی بارے میں