رومانیہ’انقلابی مراعات‘ کےخاتمے پر احتجاج

رومانیہ تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سنہ 1989 میں چاؤسسکو کی گرفتاری کے بعد لوگوں نے سڑکوں پر جشن منایا تھا

جن لوگوں نے رومانیہ کے 1989 کے انقلاب میں حصہ لیا تھا وہ حکومت کی طرف سے دی گئی سہولیات کے ختم کیے جانے کے خلاف احتجاج کر رہے ہیں۔

بلکان انسائٹ ویب سائٹ کے مطابق تقریباً 22,000 افراد ایسے ہیں جن کے پاس اضافی استحقاق کے سرٹیفیکیٹ ہیں جیسا کہ ٹرین کا مفت سفر کرنا، لیکن ان میں سے 6,000 ایسے بھی ہیں جو 500 ڈالر ماہانہ رقم بھی لیتے ہیں۔

حکومت نے دسمبر میں یہ ادائیگی ختم کر دی تھی اور کہا تھا کہ لوگوں کو نئے سرٹیفیکیٹ جاری کیے جائیں گے جن پر لکھا ہو گا کہ انھوں نے انقلاب میں اہم کردار ادا کیا تھا۔

ویب سائٹ کے مطابق نئے قوانین میں ترمیم کے لیے مظاہرین نے کئی دن دارالحکومت بخارسٹ کی سڑکوں پر احتجاج کیا۔

مظاہرہ کرنے والوں میں سے ایک کا کہنا تھا کہ ’حکومت کو قانون کو واپس لینا ہو گا کیونکہ اس کی وجہ سے بہت سے انقلابیوں کا جینے کا سہارا چھن جائے گا۔‘

’ہم میں سے سات پہلے ہی بھوک ہڑتال پر ہیں اور ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ احتجاج جاری رہے گا۔‘

دسمبر میں رومانیہ نے انقلاب کی 25 ویں سالگرہ منائی تھی۔ کمیونسٹ آمر نکولائی چاؤسسکو کے خلاف بغاوت میں 1,100 افراد ہلاک ہوئے تھے۔ سنہ 1989 کو کرسمس کے دن ان کے اقتدار کے خاتمے کے بعد ان کو اور ان کی بیوی کو مار دیا گیا تھا۔ زیادہ تر ہلاکتیں چاؤسسکو کا تحتہ الٹنے کے بعد گلیوں میں لڑی گئی لڑائی میں ہوئی تھیں جہاں 900 سے زیادہ افراد ہلاک ہوئے تھے۔