القاعدہ نےچارلی ایبڈو پرحملے کی ذمہ داری قبول کر لی

تصویر کے کاپی رائٹ EPA

یمن میں القاعدہ کے ایک رہنما نے ایک ویڈیو کے ذریعے فرانسیسی میگزین چارلی ایبڈو پر حملے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔

البتہ اس ویڈیو میں القاعدہ نے کوئی ایسی شہادت مہیا نہیں کی ہے جس سے یہ ثابت ہو کہ یہ حملہ القاعدہ کی کارروائی ہے۔

اسی گروپ نے اس سے پہلے چارلی ایبڈو پر حملے کا خیرمقدم کیا تھا۔

یمن میں القاعدہ کے رہنما ناصر بن علی انسی نے ایک ویڈیو میں دعویٰ کیا کہ جزیزہ نما عرب القاعدہ نے پیغمبر اسلام کی ہتک کا بدلہ لینے کے لیے کی گئی ہے۔

انھوں نے دعویٰ کیا کہ القاعدہ جزیرہ نما عرب نے اس ٹارگٹ کو چنا اور اس حملے کی منصوبہ بندی کی۔

انھوں نے مزیدایسے حملوں کی دھمکی دی۔