جرمانہ نہ دینے پر بدنامی سٹیشن پر

چین تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption چین کے صوبے ہنان کے سٹیشن کے باہر لگی ایک سکرین

چین کی ایک عدالت نے ان لوگوں کے نام اور تصاویر ایک اہم ریلوے سٹیشن کے سامنے ایک بڑی سکرین پر لگانا شروع کر دیے ہیں جو جرمانے کی رقم ادا نہیں کرتے۔

جنوبی صوبے ہنان کے شہر چینگشا میں یہ اقدام ان لوگوں کے خلاف کیا گیا جنھوں نے عدالت کے جرمانہ دینے کے حکم کی خلاف ورزی کی تھی۔

شیاؤشیانگ مارننگ پوسٹ کی ویب سائٹ کے مطابق سٹیشن کے باہر ایک بڑی سکرین پر ان افراد کی تصاویر نظر آتی ہیں اور ہر آنے جانے والا مسافر انھیں دیکھتا ہے۔ ان تصاویر کے ساتھ ان کے نام، شناخت اور شناختی کارڈ نمبر اور جتنی رقم انھوں نے ادا کرنی ہے درج ہے۔ زیادہ تر لوگوں نے تو 10,000 یوان یعنی 1600 امریکی ڈالر دینے ہیں لیکن سب سے زیادہ واجب ادا رقم 28 ملین یوان (4.5 ملین ڈالر) ہے۔

اگرچہ کچھ ماہرین نے اس پر تشویش کا اظہار کیا ہے لیکن مقامی وکیل ڈینگ لونگ کہتے ہیں کہ عدالت کے پاس اس بات کا اختیار ہے کہ وہ جس طرح چاہے ان افراد کے ناموں کی تشہیر کرے جنھوں نے عدالت کے حکم کی نافرمانی کی ہے۔

چینی میڈیا نے ایسے بہت سے لوگوں کے انٹرویو کیے ہیں جنھوں نے اس اقدام کو سراہا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ یہ لوگوں کو مستقبل میں ایسا کرنے سے باز رکھے گا اور ان کی حوصلہ افزائی کرے گا کہ وہ رقم ادا کریں۔

ایک شخص نے شیاؤشیانگ مارننگ پوسٹ کو بتایا کہ ’اس سے ان لوگوں تک پیغام پہنچے گا کہ عدالت اپنے کام کے متعلق سنجیدہ ہے۔‘

سٹیشن کے باہر قطار میں کھڑے ایک شخص نے چائنا نیوز ایجنسی کو کہا کہ عدالت نے انھیں ظاہر کرنے کا ایک مشکل فیصلہ کیا ہے۔ ’یہ ایک اچھا کام ہے۔‘

اسی بارے میں