یورو زون وزرائے خزانہ کی مجوزہ یونانی اصلاحات کی حمایت

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption یورپی کمیشن کا کہنا تھا کہ یونان کا نقطۂ آغاز صحیح ہے

یورو زون کے وزرائے خزانہ نے قرضوں میں توسیع کے لیے مطلوب یونان کی مجوزہ اصلاحات کو منظور کر لیا ہے۔

یوروگروپ کا کہنا ہے کہ اس بات پر اتفاق کیا گیا ہے کہ اس معاہدے کو حتمی منظوری دینے کے لیے کئی ریاستوں میں قومی طریقۂ کار کے تحت پارلیمان ووٹنگ کروائی جائے گی۔

یونان کی جانب سے پیش کیے گئے مجوزہ اقدامات میں ٹیکس چوری کے خلاف جنگ، ایندھن اور تمباکو کی سمگلنگ سے نمٹنا شامل ہے۔

یورپی کمیشن کا کہنا تھا کہ یونان کا نقطۂ آغاز صحیح ہے۔

یونانی اصلاحات پر اپنا فیصلہ سنانے سے قبل یورو زون کے وزرائے خارجہ ایک کانفرنس کال میں شامل ہوئے۔

یورو زون کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا ہے ’ ہم نے یونانی انتظامیہ کے اداروں کے ساتھ قریبی تعاون ، ترقی اور موجودہ انتظامات پر مبنی اصلاحات کے اقدامات کی فہرست کو وسیع کرنے کا کہا ہے۔‘

اقتصادی امور کے یورپی کمشنر پیری ماسکووچ کا کہنا تھا ’ اس معاہدے سے فوری بحران ٹل گیا۔‘

ان کا مزید کہنا تھا ’ اس کا مطلب یہ نہیں کہ ہم نے اصلاحات کی منظوری دے دی ہے بلکہ اس کا مطلب ہے کہ ہم مزید بات چیت کے لیے سنجیدہ ہیں۔‘

تاہم آئی ایم ایف کی سربراہ کرسٹین لاگارڈ کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ انہوں نے ان مجوزہ اصلاحات پر تحفظات کا اظہار کیا ہے۔

کرسٹین لاگارڈ نے یورو گروپ کو ایک خط میں لکھا ہے ’ایتھینز میں نئے حکام کی جانب سے ٹیکس چوری اور بد عنوانی کے خلاف اقدامات جیسے عزم پر مجھے حوصلہ ملا ہے۔‘

اسی بارے میں