دس چیزیں جن سے ہم گذشتہ ہفتے لاعلم تھے

تصویر کے کاپی رائٹ Thinkstock

1۔گھوڑیاں ایسے گھوڑوں کو پسند کرتی ہیں جن کے ہنہنانے کی آواز بلند ہوتی ہے۔

مزید جاننے کے لیے (نیو سائنٹسٹ)

2۔ برطانوی چانسلر جارج اوسبورن کے خیال میں ایک ہارڈ ہیٹ فیکٹری کا دورہ کرنے کا خیال مزاحیہ ہے۔

مزید جاننے کے لیے (فنانشل ٹائمز)

3۔ دنیا میں چائے کی بہترین پتّی سکاٹ لینڈ میں تیار کی جاتی ہے۔

مزید جاننے کے لیے (دی ٹائمز)

4۔ وینزویلا کی جھیل ماراکابو میں دنیا میں سب سے زیادہ آسمانی بجلی گرتی ہے۔

مزید جاننے کے لیے (گارڈیئن)

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service

5۔ ونسٹن چرچل نے امریکہ کی دوسری جنگِ عظیم میں شمولیت پر امریکی عوام کو قائل کرنے کے لیے لنکن کیتھیڈرل میں رکھی ہوئی ’میگنا کارٹا‘ کی نقل امریکہ کو دینے کی کوشش کی تھی۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں۔

6۔ سبزیوں اور پھلوں کے اندر اگر بلب نصب کر دیا جائے تو وہ مختلف قسم کی روشنیاں خارج کرتے ہیں۔ پھول گوبھی جیسی کھردری سطح والی سبزیوں یا پھلوں سے روشنی کا اخراج سب سے دلچسپ ہوتا ہے۔

مزید جاننے کے لیے (سمتھسونین)

7۔ 48 کروڑ سال قبل پائے والے لابسٹر(سمندری مخلوق) حجم میں انسان کے برابر ہوتے تھے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں۔

تصویر کے کاپی رائٹ n

8۔ انگلش فٹبال کلب مانچسٹر یونائیٹڈ کے سابق کھلاڑیوں کے ملکیتی فٹبال ہوٹل میں گیری نیول کی پہچان شیمپو اور ان کے بھائی فل نیول کی پہنچان صابن کی ٹکیہ ہے۔

مزید جاننے کے لیے (فنانشل ٹائمز)

9۔ گرگٹ اپنا رنگ جلد کے اندر مخصوص خلیوں میں رنگوں کے کرسٹلز کی ترتیب کو اوپر نیچے کر کے بدلتا ہے۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

10۔ فن لینڈ کے وزیرِ اعظم کے ایک 95 سالہ رشتہ دار اب بھی ہر سنیچر اور اتوار کو سکیئنگ کرنے جاتے ہیں۔

مزید جاننے کے لیے کلک کریں

اسی بارے میں