پاپوا نیوگنی میں 7.7 شدت کا زلزلہ مگر سونامی وارننگ واپس

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption یہ زلزلہ پپوا نیو گنی کے شمال مشرق میں واقع شہر كوكوپو سے تقریبا 50 کلو میٹر دور رابول کے پاس آیا

جنوبی بحر الکاہل کے ملک پاپوا نیوگنی میں پیر کو زبردست زلزلے کے بعد سونامی کی وارننگ جاری کی گئی جسے بعد میں واپس لے لیا گیا۔

امریکی جیولوجیکل سنٹر کا کہنا ہے کہ یہ زلزلہ پاپوا نیوگنی کے شمال مشرق میں واقع شہر كوكوپو سے تقریبا 50 کلو میٹر دور رابول کے پاس آیا۔ ریکٹر سکیل پر اس کی شدت 7.7 ریکارڈ کی گئی ہے جبکہ اس کا مرکز زمین میں 65 کلومیٹر نیچے تھا۔

پاپوا نیو گنی کے نیشنل ڈیزاسٹر سنٹر کے سربراہ مارٹن موس نے زلزلے کے نتیجے میں جانی نقصانات کی تصدیق نہیں کی ہے۔

خبر رساں ادارے اے پی کے مطابق مارٹن موس نے کہا کہ رابول شہر کے پاس تقریبا ڈیڑھ میٹر اونچی لہریں ریکارڈ کی گئی ہیں۔

رابول میں شہریوں نے سطح سمندر میں قدرے اضافہ دیکھا۔ رابول ہوٹل کی ایک ملازمہ میکا ٹووی نے بتایا کہ سونامی کا پانی سمندر کے کنارے موجود بعض شاپنگ مالز کے پارکنگ والے حصوں میں بھر گیا ہے اور لیکن کوئی نقصان نہیں ہوا۔

انھوں کہا ’جب زلزلہ آیا تھا تو ہوٹل میں ٹھہرے ہوئے مہمان اور عملہ گھبرا کر باہر نکل آئے تھے۔ زلزلہ تقریبا پانچ منٹ تک رہا اور اتنا شدید تھا کہ ہوٹل کے گرنے کا خطرہ لاحق ہو گیا تھا لیکن ہوٹل بچ گیا۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption اس زلزے کے نتیجے میں تقریبا ڈیڑھ میٹر اونچی لہریں اٹھیں

اس سے قبل بحرالکاہل سونامی وارننگ سینٹر کا کہنا تھا کہ تین میٹر اونچی سونامی کی لہریں كوكوپو سے ایک ہزار کلو میٹر تک کے دائرے میں پھیل سکتی ہیں۔ یہاں تک کہ ایک فٹ اونچی لہریں روس تک پہنچ سکتی ہے۔

ادارے کے مطابق سونامی روس، چین، جاپان، آسٹریلیا، نیوزی لینڈ اور انڈونیشیا تک پہنچ سکتی ہے تاہم ان ممالک میں اس کا اثر کم ہو گا۔

اس بیان کے بعد میں سونامی کی وارننگ واپس لے لی گئی۔

اس سے قبل مارٹن موس نے بتایا کہ دارالحکومت پورٹ موریسبي میں موجود افسر اپنے ساتھیوں سے رابطہ کی کوشش میں ہے اور زلزلے کے بعد اب تک کسی طرح کے نقصانات کی اطلاعات نہیں ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ’صورت حال فی الحال کنٹرول میں ہے۔‘

خیال رہے کہ پپوا نیو گنی میں زلزلے کا آنا معمول کی بات ہے۔

اسی بارے میں