لیبیا کے بحران پر اوباما کی خلیجی ممالک سے اپیل

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption لیبیا کے سابق صدر معمر قذافی کی سنہ 2011 میں برطرفی کے بعد سے لیبیا بحران کا شکار ہے

امریکی صدر براک اوباما نے خلیجی ممالک سے اپیل کی ہے کہ وہ لیبیا کی بحرانی صورت حال کے حل کے لیے وہاں کے متحارب گروہوں پر اپنے اثرورسوخ کا استعمال کریں۔

انھوں نے کہا کہ ان خلیجی ممالک کو شمال افریقی ملک لیبیا میں جاری جنگ کو بڑھاتے ہوئے دیکھا گیا ہے۔

خیال رہے کہ لیبیا کے سابق صدر معمر قذافی کی سنہ 2011 میں برطرفی کے بعد سے لیبیا بحران کا شکار ہے۔

لیبیا میں دو متحارب حکومتیں ہیں اس کے علاوہ وہاں اپنے اپنے علاقوں پر قابض کئی جنگجو گروہ ہیں۔

ادھر لیبیا کے بارے میں خلیجی ممالک منقسم ہیں۔ اطلاعات کے مطابق متحدہ عرب امارات لیبیا کے اسلام پسند گروپ کے ٹھکانوں پر بمباری کر رہی ہے جبکہ قطر کو ایسے آپریشنوں پر تحفظات ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption اٹلی کے حکام نے حالیہ دنوں میں 10 ہزار سے بھی زیادہ تارکین وطن کو گرفتار کیا ہے

اوباما کا کہنا ہے ’لیبیا میں جہاں دولتِ اسلامیہ کی موجودگی ہے وہاں چند ڈرون حملوں اور فوجی آپریشنوں سے کچھ نہیں ہوگا۔‘

انھوں نے میڈیا کو بتایا ’ہمیں بعض خلیجی ممالک کو اس بات کی ترغیب دینی ہوگی کہ وہ لیبیا میں موجود مختلف دھڑوں پر اپنے اثرو رسوخ کا استعمال کریں کہ وہ آپس میں مزید تعاون کریں۔‘

انھوں نے کہا ’بعض معاملوں میں آپ انھیں جنگ کو کم کرنے کے بجائے انھیں ہوا دیتے ہوئے پائیں گے۔‘

صدر اوباما آئندہ ماہ وائٹ ہاؤس میں خلیجی ممالک کے درمیان تعاون کی کونسل کے چھ رہنماؤں کا استقبال کریں گے۔ ان ممالک میں بحرین، کویت، عمان، قطر، سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات شامل ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption صدر اوباما نے اطالوی وزیر اعظم کے ساتھ تارکین وطن اور لیبیا کے مسئلے پر میڈیا سے بات کی

لیبیا کے عدم استحکام کے دوران انسانوں کی سمگلنگ کا نیٹ ورک فروغ حاصل کر رہا ہے اور بہت سے تارکین وطن یورپ کے لیے خطرناک سفر کی کوشش کرتے ہیں۔

صدر اوباما اطالوی وزیر اعظم میٹیو رینزی کے ساتھ میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔

اٹلی کے حکام نے حالیہ دنوں میں دس ہزار سے زائد زیادہ تارکین وطن کو گرفتار کیا ہے۔

میٹیو رینزی نے کہا کہ اس مسئلے کا واحد حل لیبیا میں استحکام کی بحالی ہے۔

انھوں نے کہا ’میرے خیال میں بحیرۂ روم ایک سمندر ہے قبرستان نہیں۔ فی الحال مسئلہ لیبیا کے حالات ہیں۔‘

اسی بارے میں