سیٹیاں بجا کرتنگ کرنے پر پولیس کوشکایت

Image caption پولی کا کہنا ہے کہ وہ ان بازیبا حرکات سے بہت عجیب محسوس کرتی تھیں اور انھوں نے پولیس کو رپورٹ کرنے کے بارے میں سوچا

برطانیہ میں ایک 23 سالہ خاتون نے زیر تعمیر عمارت پر کام کرنے والےافراد کی طرف سے روزانہ سیٹیاں بجا کرانھیں تنگ والےافراد کے خلاف پولیس میں رپورٹ کی ہے۔

پوپی سمارٹ نامی خاتون کا کہنا ہے کہ انھوں نے ایک ماہ تک جنسی طور پر ہراساں کیے جانے اور چھیڑ خانی کرنے کے بعد پولیس میں شکایت درج کروائی ہے۔

ویسٹ میئرکی پولیس کا کہنا ہے کہ وہ معاملے کا جائزہ لے رہے ہیں۔

پولی سمارٹ نےنیوز بیٹ کو بتایا کہ ’میں جب بھی وہاں سے گزرتی تو اس زیر تعمیر بلڈنگ پر کام والے بلڈنگ سے باہر نکل کر اُس وقت تک سٹیاں بجاتے رہتے جب تک میں سڑک پر چلتی ہوئی دور تک نکل جاتیں۔‘ پوپی کا کہنا ہے کہ بلڈنگ سائٹ کے مالک نے اُن سے معذرت کی ہے۔

انھوں نے تفصل بتاتے ہوئے کہا کہ ’یہاں تک ایک لڑکے نے میرے سامنے قریب آ کر مجھے’مورنگ لو‘ کہا اور یہ بہت ہی اشتعال انگیز تھا اور دوسرے نے مجھ پر آواز کسی۔انھوں نے میرا راستہ بند کر دیا۔‘

پوپی سمارٹ کا کہنا تھا کہ وہ اس طریقہ سے جنسی طور پر ہراساں کیے جانے پر بہت تنگ آ گئی تھیں۔وہ کہتی ہیں ان حرکات کو نظرانداز کرنے کے لیے انھوں نے دھوپ کا چشمہ پہنا شروع کر دیا اور کان میں ہیڈ فون لگانے لگیں، تاکہ وہ انھیں سن نہ سکیں لیکن آخر کب تک وہ برداشت کرتیں۔

پولی کا کہنا ہے کہ وہ ان بازیبا حرکات سے بہت عجیب محسوس کرتی تھیں اور انھوں نے پولیس کو رپورٹ کرنے کے بارے میں سوچا۔

’اگر ایسا ایک دو یا تین بار ہوتا تو شاید میں نظرانداز کر دیتی کیونکہ ایسی چیزیں ہوتی ہیں اور ہم نظرانداز کر دیتے ہیں لیکن یہ سب کچھ بار بار ہوا۔‘

پوپی سمارٹ کا کہنا ہے کہ انھوں نے بلڈنگ کے مالک سے بات کی، جس پر انھوں نے اُن سے معذرت کی تھی لیکن بلڈنگ سائٹ کے مالک ملازمین پر ہر وقت نظر نہیں رکھ سکتی تھیں۔

Image caption ولیس میں شکایت درج کروانے پرسوشل میڈیا میں پوپی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے جبکہ کچھ لوگوں نے ان کی حمایت بھی کی ہے

’میں نے سوچا کہ اب بہت ہو گیا اور اس کو روکنا ہو گا‘

تعمراتی جگہ جس کی نگرانی فیمکا بلڈنگ اینڈ مینٹنس کرتی ہے، نے اُس واقعے پر تبصرہ کرنے سے انکار کیا ہے۔

دوسری جانب پولیس میں شکایت درج کروانے پرسوشل میڈیا میں پوپی سماٹ کو بعض لوگوں نےتنقید کا نشانہ بنایا۔ البتہ کچھ لوگوں نے ان کی حمایت بھی کی ہے۔

پوپی سمارٹ کہتی ہیں کہ ’درحقیقت بہت سی خواتین کو ان چیزوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور انھیں ختم کرنے کے لیے ہمیں کچھ کرنا ہو گا۔‘