سترہ لڑکیوں سے بیک وقت ’عشق‘ پر گرفتار

چینی شخص کی گرفتاری تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption گرفتار ہونے والے شخص کا تعلق ہونان صوبے سے ہے

چین میں حکام نے ایک ساتھ ایک وقت میں سترہ گرل فرینڈز رکھنے والے شخص کو دھوکہ دہی کے الزام میں گرفتار کرلیا ہے۔

ہونان صوبے سے تعلق رکھنے والے اس شخص کے بارے میں یہ خبر گزشتہ مہینے اس وقت منظر عام پر آئی جب سترہ کی سترہ خواتین کی ملاقات اس وقت ہوئی جب وہ اس شخص کی مزاج پرسی کے لیے ہسپتال پہنچیں۔

’ساؤتھ چائنا مارننگ پاسٹ‘ نامی اخبار کے مطابق دھوکہ دہی کے اس الزام میں یہ الزام بھی شامل ہے کہ یہ شخص ان خواتین سے مسلسل پیسے لیتا تھا۔

اخبار کے مطابق ان خواتین نے اس شخص سے بدلہ لینے کے لیے ایک آن لائن چیٹ گروپ بنایا جس کا نام ’روینج الائنس ‘ یعنی انتقامی اتحاد رکھا۔ اخبار کے مطابق اسی آن لائن گروپ پر بات چیت کے دوران ان خواتین کو یہ معلوم ہوا کہ یہ شخص ہر مہینے ان خواتین سے رقم لیتا تھا۔

ہونان صوبے کے چانگشا شہر سے تعلق رکھنے والے اس شخص کا نام مسٹر یووان ہے اور ان کے بارے میں معلوم ہوا کہ ایک گرل فرینڈ سے ان کی ایک اولاد بھی ہے اور ایک دیگر گرل فرینڈ کے ساتھ وہ شادی کرنے کا منصوبہ بنا رہے تھے۔

مسٹر یووان کے بارے میں یہ انکشاف کہ ان کی ایک وقت میں سترہ گرل فرینڈز ہیں اس وقت ہوا جب ایک سڑک حادثے کے شکار ہونے کے بعد انہیں ہسپتال میں داخل کرایا گیا اور ڈاکٹروں نے یہ اطلاع دینے کے لیے ان کے رشتے داروں اور اہل خانہ کو فون کیا۔

اٹھارہ مہینے پرانی ان کی ایک گرل فرینڈ زیاؤ لی نے مقامی اخبار زیا‎ؤزیانگ چین باؤ کو بتایا کہ ’ مجھے جب یہ معلوم ہوا کہ وہ ہسپتال میں ہے تو میں بہت فکر مند ہوگئی تھی۔‘

’ لیکن جب میں نے ہسپتال میں ایک کے بعد ایک خوبصورت لڑکی کو ان کی مزاج پرسی کے لیے آتے دیکھا تو میں بے حد روئی‘۔

اس خبر کے بارے میں سوشل میڈیا پر زبردست ردعمل سامنے آیا، بعض افراد نے مسٹر یووان کے رویے پر تنقید کی تو وہیں ب‏عض نے ان کے ایک ساتھ اتنی ساری گرل فرینڈز رکھنے کے ہنر کی تعریف بھی کی۔

اسی بارے میں