خوبصورت شہزادی کا بدصورت مجسمہ

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter
Image caption سیدھے ہاتھ پر برلن میں موجود شہزادی نفرتیتی کا اصل مجسمہ، اور بائیں ہاتھ پر مصری حکومت کی طرف سے بنایا گیا مجسمہ

مصر میں حکومت کی طرف سے معروف خوبصورت شہزادی نفرتیتی کی بدصورت مورتی کی رونمائی پر عوام نے حکام کے ساتھ ساتھ ملک میں فنون کی موجودہ صورت حال کا بھی مذاق اڑایا ہے۔

اپنے شوہر کے ہمراہ چودھویں صدر میں مصر پر حکومت کرنے والی شہزادی نفرتیتی کی خوبصورتی کی داستانیں عوام میں بہت مقبول ہیں۔ ان کے نام کے لفظی معنی ’خوبصورت عورت آ گئی ہے‘ کے ہیں۔ ان کی تصویر 1912 میں ملنے والے ایک مجسمے کی مدد سے تشکیل دی گئی ہے۔ یہ مجسمہ اب جرمنی کے شہر برلن کے ایک عجائب گھر میں ہے۔ اس مجسمے کی ملکیت کے بارے میں جرمنی اور مصر میں اختلاف پایا جاتا ہے۔

مصری عوام کے لیے شہزادی نفرتیتی ان کے ملک کی خوبصورتی اور تاریخ کی ایک فخریہ علامت ہے اور جب مصری حکام نے ان کا مجسمہ صامالوت نامی شہر کے داخلی دروازوں پر بنا کر نصب کرنے کا فیصلہ کیا تو مصری عوام نے اپنی قدیم شہزادی کے بارے میں سوچنا شروع کر دیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ TWITTER
Image caption اس ٹوئیٹ میں ایک صاحب لکھتے ہیں ’فرق تلاش کریں‘

تاہم بدقسمتی سے اس مجسمے اور ان کے اصل حسن اور خوبصورتی میں بہت فرق تھا۔ صاف سی بات ہے، یہ انتہائی بدصورت تھا۔ ایک مصری خاتون نے ٹویٹ کے ذریعے کہا: ’یہ مجسمہ شہزادی نفرتیتی اور ہر مصری کے لیے شرم کا باعث ہے۔ ‘

جبکہ ایک اور صاحب لکھتے ہیں: ’اس کا نام بدصورت، بےذوقی سے عبارت اور فن سے خالی ہونا چاہیے۔ نفرتیتی نہیں۔‘ بہت سے مصریوں نے اپنے غصے کا اظہار اس مجسمے کے مجسمہ سازوں کو تنقید کا نشانہ بنا کر کیا۔

ایک صاحب نے لکھا: ’اگر آپ کو مجسمہ بنانا نہیں آتا تو آپ خوبصورت نفرتیتی کے ساتھ ناانصافی نہ کریں۔ آپ نہ صرف ماضی کو خراب کر رہے ہیں بلکہ حال کو بھی نقصان پہنچا رہے ہیں۔‘

ایک اور نے ٹویٹ کیا: ’میں کہتا ہوں کہ جرمنی میں پڑے اصل مجسمے کو یہاں واپس نہ لایا جائے۔ کم از کم وہاں اس کی عزمت تو سلامت ہے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ TWITTER
Image caption اس ٹویٹ میں ایک صارف نے لکھا ہے: ’شہزادی نفرتیتی شادی سے پہلے اور شادی کے بعد‘

ہزاروں دوسرے مصری عربی میں ہیش ٹیگ نفرتیتی کا استعمال کر رہے ہیں اور اس مجسمے کا اصل مجسمے سے طنزیہ طور پر موازنہ کر رہے ہیں۔

مقامی میڈیا کے مطابق مصری حکام نے اس مجسمے کو عوام کی تنقید کے بعد ہٹا دیا ہے اور اس جگہ ایک فاختہ کا مجسمہ نصب کر دیا ہے۔

اسی بارے میں