سوئس فوج کا گائیوں کے لیے فرانس میں پانی’چوری‘

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ہیلی کاپٹروں کی پروازوں سے مقامی رہائشی اور جھیل پر آنے والے سیاح بھی پریشان ہو گئے تھے

سوئٹرزلینڈ کی فوج کے ہیلی کاپٹرز نے فرانسیسی سرحد عبور کی تاکہ پیاسی گائیوں کو وہاں سے پانی لا کر پلایا جا سکے۔

سوئٹرزلینڈ کی فوج کی جانب سے سرحدی حدود میں داخل ہونے پر فرانسیسی حکام نے خاصی تنقید کی ہے۔

سوئس فوج کا فرانسیسی حدود سے پانی لا کرگائیوں کو پلانے کا یہ واقعہ گذشتہ ہفتے پہاڑی علاقے زیورا کی جھیل روسسز میں پیش آیا۔

سوئس ہیلی کاپٹروں کی جھیل پر پروازیں فرانسیسی حکام کے لیے باعث حیرت تھیں کیونکہ ان پروازوں کی اجازت نہیں لی گئی تھی۔

سوئٹرزلینڈ کے ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ اس مشن کی اجازت فرانس کے مقامی حکام کی بجائے فرانسیسی فضائیہ سے لی گئی تھی کیونکہ گرمی کی حالیہ لہر کی وجہ سے پانی کی کمی کا شکار ہونے والی گائیوں کو بچانے کے لیے پانی پلانے کی ضرورت تھی۔

امریکی خبر رساں ایجنسی اے پی کے مطابق فرانسیسی علاقے لیس روسسز کے ڈپٹی میئر کرسٹوفئی میتھیز کا کہنا ہے کہ مقامی انتظامیہ کو بالکل علم نہیں تھا کہ ایسا کوئی آپریشن ہونے والا ہے۔

تاہم دوسری جانب سوئس فوج کے اہلکار ڈینس فوروڈسکوس نے مقامی اخبار لی مارٹن کو بتایا:’جیسے ہی ہم سے رابطہ کیا گیا تو ہمیں اندازہ ہوا کہ صحیح طرح سے معلومات فراہم نہیں ہو سکی ہیں اور ہم نے اس آپریشن کو فوری طور پر روک دیا۔‘

اطلاعات کے مطابق سوئس ہیلی کاپٹروں کی پروازوں سے مقامی رہائشی اور جھیل پر آنے والے سیاح بھی پریشان ہو گئے تھے۔

اسی بارے میں