’چین امریکہ میں موجود چینی بھگوڑوں پر دباؤ ڈالنا بند کرے‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption آپریشن فوکس ہنٹ کے تحت دنیا بھر سے 930 سے زیادہ چینی باشندوں کو بیرونِ ملک سے واپس لایا گیا ہے

امریکہ نے اطلاعات کے مطابق چین کو خبردار کیا ہے کہ وہ امریکی سرزمین پر ایسے خفیہ ایجنٹ بھیجنے کا سلسلہ بند کر دے جن کا کام چین سے بھاگ کر امریکہ آنے والوں پر وطن واپسی کے لیے دباؤ ڈالنا ہے۔

امریکی اخبار نیویارک ٹائمز نے امریکی اہلکاروں کے حوالے سے کہا ہے کہ چینی ایجنٹ امریکہ میں موجود چینیوں کو واپس لے جانے کے لیے ان پر دباؤ ڈالنے کے کئی طریقے استعمال کر رہے ہیں۔

اخبار کے مطابق ’آپریشن فوکس ہنٹ‘ نامی یہ مشن چین کی ان عالمی کوششوں کا حصہ ہے جن کا مقصد ایسے افراد کو واپس وطن لانا ہے جن پر مالی بدعنوانی کا شبہہ ہے۔

نیویارک ٹائمز کے مطابق امریکی محکمۂ خارجہ نے حالیہ چند ہفتوں میں چین کو اس سلسلے میں تنبیہ کی ہے تاہم محکمۂ خارجہ کی جانب سے اس خبر پر کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔

اخبار کا کہنا ہے کہ چین کی وزارتِ عوامی تحفظ کے اہلکار تجارتی یا سیاحتی ویزوں پر امریکہ آ کر چینی منحرفین کو ڈراتے دھمکاتے رہے ہیں اور انھیں چین میں موجود ان کے اہلِ خانہ سے برے سلوک کی دھمکیاں دی جاتی رہی ہیں۔

امریکی اخبار نے چینی وزارت کے اعدادوشمار کے حوالے سے لکھا ہے کہ آپریشن فوکس ہنٹ کے تحت دنیا بھر سے 930 سے زیادہ چینی باشندوں کو بیرونِ ملک سے واپس لایا گیا ہے۔

یہ خبر ایسے موقع پر منظرِ عام پر آئی ہے جب چین کے صدر شی جن پنگ آئندہ ماہ پہلی بار سرکاری دورے پر امریکہ آنے والے ہیں۔

ان کے دورے کے موقع پر دونوں ممالک تجارت، حقوقِ انسانی اور سائبر حملوں جیسے معاملات پر بات چیت کریں گے۔

اسی بارے میں