’ووکس ویگن کے کچھ عملے کے اقدامات مجرمانہ تھے‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ووکس ویگن نے ایک کروڑ دس لاکھ متاثرہ گاڑیوں میں نصب سافٹ ویئر کی مرمت کرنے کا فیصلہ کیا ہے

جرمن کار ساز ادارے ووکس ویگن کے بورڈ کے رکن اور ریاست لوئر سیکسنی کے وزیر معاشیات اولف لِیس کا کہنا ہے کہ مضر صحت گیس کے اخراج کی جانچ میں کی گئی بددیانتی کے معاملے میں کمپنی کے عملے کے کچھ ارکان کے اقدامات مجرمانہ تھے۔

بی بی سی کے پروگرام نیوز نائٹ میں بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ جنھوں نے دھوکے کی اجازت دی یا وہ ملازمین جنھوں نے گاڑیوں میں دھوکہ دینے والاسافٹ ویئر نصب کیا، اُنھیں اس معاملے کی ذمہ داری انفرادی طور پر قبول کرنی چاہیے۔

سوئٹزرلینڈ میں ووکس ویگن کی فروخت پر پابندی

ووکس ویگن نے یورپ میں بھی ’ہیراپھیری‘ کی

واضح رہے کہ اس سکینڈل میں ڈیزل انجن والی تقریباً ایک کروڑ دس لاکھ گاڑیاں متاثر ہوئی ہیں۔

جرمنی میں حکام پہلے ہی ووکس ویگن کے سابق چیف ایگزیکیٹو مارٹن ونٹرکورن کے خلاف تحقیقات کا آغاز کر چکے ہیں جس میں ان کے خلاف دھوکہ دہی کے الزامات کا جائزہ لیا جائے گا

مارٹن ونٹرکورن نے تقریباً نو برس تک ووکس ویگن کی سربراہی کے بعدگزشتہ ہفتے یہ کہتے ہوئے استعفیٰ دے دیا تھا کہ وہ گاڑیوں کی آلودگی کی پیمائش میں بددیانتی کے بارے میں لاعِلم تھے۔

اُنھوں نے یہ بھی کہا کہ بورڈ کو اس معاملے کا علم آخری اجلاس میں ہوا۔

لِیس نے بی بی سی کو بتایا کہ ’ہمیں یہ معلوم کرنے کی ضرورت ہے کہ بورڈ کو اس بارے میں پہلے کیوں نہیں بتایاگیا جب اُنھیں تقریباً ایک سال قبل امریکہ میں اس کا علم تھا۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ EPA
Image caption سکینڈل سامنے آنے کے بعد سے ووکس ویگن کی حصص کی قیمتوں میں مسلسل گراوٹ جاری ہے

لِیس کا کہنا ہے کہ کمپنی کو ابھی کوئی اندازہ نہیں ہے کہ انجن کی مشکلات اور قانونی پیچیدگیوں سے نمٹنے پر کُل کتنے اخراجات آئیں گے ’لیکن نقصان بہت بڑا ہے کیونکہ لاکھوں افراد کا ووکس ویگن سے اعتماد اٹھ گیا ہے۔‘

ووکس ویگن نے ایک کروڑ دس لاکھ متاثرہ گاڑیوں میں نصب سافٹ ویئر کی مرمت کا کام بھی شروع کر دیا ہے اور کمپنی کا کہنا ہے کہ ’آئندہ چند ہفتوں اور مہینوں میں‘ صارفین کو بتا دیا جائے گا مرمت کا کام کس طرح ہوگا۔

سکینڈل سے ووکس ویگن کی حصص کی قیمتوں میں مسلسل گراوٹ جاری ہے اور منگل کو فرینکفرٹ کے بازارِ حصص میں کمپنی کے شیئرز کی قدر میں ڈیڑھ فیصد کی کمی دیکھنے میں آئی۔

یہ سکینڈل سامنے آنے کے بعد سے کمپنی کی مالیت میں 35 فیصد کمی ہو چکی ہے۔

اسی بارے میں