یروشلم میں دو افراد کو مارنے والا فلسطینی حملہ آور ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption پولیس نے لائن گیٹ کے اطراف میں علاقوں کو بند کر کے سکیورٹی مزید بڑھا دی ہے

اسرائیلی پولیس کے مطابق ایک فلسطینی حملہ آور کو فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا ہے جس نے یروشلم میں دو افراد کو ہلاک اور دو کو زخمی کر دیا تھا۔

چاقو سے مسلح فلسطینی شخص نے قدیم علاقے کے لائن گیٹ کے قریب چار افراد پر حملہ کیا جس میں دو ہلاک ہو گئے۔

اسرائیلی پولیس نے فائرنگ کر کے حملہ آور کو ہلاک کر دیا۔

مسجدِ اقصیٰ کے احاطے میں ایک بار پھر جھڑپیں

اطلاعات کے مطابق حملہ آور نے پہلے اپنے اہلخانہ کے ساتھ موجود ایک شخص پر حملہ کر کے اس سے پستول چھینا اور پھر پستول سے ایک خاتون اور سیاحوں کے ایک گروپ پر فائرنگ کر دی۔

اس واقعے میں دو افراد کے ہلاک ہونے کے علاوہ ایک 20 سالہ خاتون اور ایک دو سالہ بچہ زخمی ہو گیا ہے اور انھیں ہپستال منتقل کر دیا گیا ہے۔

حملہ آور کی شناخت کے لیے تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا ہے۔

دو دن پہلے ہی غرب اردن میں ایک اسرائیلی جوڑے کو فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا گیا تھا۔ یہ جوڑا اپنے چار بچوں کے ساتھ گاڑی میں جا رہا تھا کہ اسے فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا گیا۔

مقبوضہ بیت المقدس میں واقع مسجدِ اقصیٰ کے احاطے میں اسرائیلی سکیورٹی فورسز اور فلسطینی نوجوانوں کے درمیان گذشتہ کچھ عرصے سے جھڑپوں کے نتیجے میں اسرائیل اور فلسطین کی تعلقات میں مزید کشیدہ ہو گئے ہیں۔

فلسطین کے صدر محمود عباس گذشتہ ہفتے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ اسرائیل یروشلیم میں آگ بھڑکانے کا خطرہ مول لے رہا ہے۔

انھوں نے اسرائیل پر الزام عائد کیا کہ وہ یورشلیم اور غرب اردن میں بے رحمی سے طاقت کا استعمال کر رہا ہے۔

اسی بارے میں