نائیجیریا: بم دھماکوں میں 15 افراد ہلاک

Image caption سنہ 2009 سے ملک میں جاری بوکوحرام کی کارروئیوں کے نتیجے میں اب تک تقریباً 17 ہزار افراد ہلاک ہوچکے ہیں

نائیجیریا کے دارالحکومت ابوجا کے مضافات میں ہونے والے دو بم دھماکوں کے نتیجے میں 15 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

حکام کے مطابق پہلا دھماکہ ابوجا سے 40 کلومیٹر کی دوری پر واقع کوجی میں ایک پولیس سٹیشن کے قریب ہوا جبکہ دوسرا دھماکہ نیانیا میں ایک بس سٹاپ پر ہوا ہے۔

بوکوحرام کو جلد شکست ہو جائے گی؟

بوکو حرام کا تباہی وبربادی کا کھیل

اگرچہ ابھی تک کسی گروہ نے ان دھماکوں کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے لیکن شبہہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ یہ دھماکے اسلامی شدت پسند گروہ بوکو حرام نے کیے ہیں۔

واضح رہے کہ بوکو حرام کی جانب سے پہلے بھی ابو جا میں کارروائیاں کی جا چکی ہیں، تاہم گروہ کی زیادہ تر کارروائیوں کا مرکز ملک کے شمال مشرقی علاقے رہے ہیں۔

نائیجیریا میں ہنگامی حالات سے نمٹنے کے لیے قائم ادارے نیشنل ایمرجنسی مینجمنٹ ایجنسی کے ترجمان کے مطابق جمعے کو ہونے والے دھماکے تقریباً ایک ساتھ ہوئے ۔

ترجمان کا مزید کہنا ہے کہ دھماکوں میں ایک جیسا بارودی مواد استعمال ہوا ہے اور یہ وہی مواد ہے جو بوکو حرام ملک کے شمال مشرقی علاقوں میں استعمال کرتی آئی ہے۔

حکام کی جانب سے جاری کیے گئے بیان کے مطابق کوجی میں ہونے والے دھماکے میں 13 اور نیانیا میں دو افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

خیال رہے کہ سنہ 2009 سے ملک میں جاری بوکوحرام کی کارروائیوں کے نتیجے میں اب تک تقریباً 17 ہزار افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

اسی بارے میں