’شمالی کوریا امریکہ کے خلاف اپنا دفاع کر سکتا ہے‘

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption پیونگ ینگ میں بی بی سی کے نامہ نگار کا کہنا ہے کہ اس پریڈ کا مقصد یہ پیغام دینا ہے کہ یہاں متحد فوج موجود ہے

شمالی کوریا کے رہبر اعلیٰ کم یونگ ان کا کہنا ہے کہ ان کا ملک امریکہ کی جانب سے شروع کی جانے والی کسی بھی جنگ میں اپنا دفاع کر سکتا ہے۔

کم یونگ ان نے یہ بات حکمراں جماعت ورکرز پارٹی کے 70 سال مکمل ہونے پر دارالحکومت پیونگ ینگ میں منعقدہ ایک بڑی تقریب کے دوران اپنے خطاب میں کہی۔

شمالی کوریا میں حکمراں جماعت کی 70 ویں سالگرہ پر جشن

شمالی کوریا کا جوہری ری ایکٹر ’مکمل طور پر کام کر رہا ہے‘

مرکزی چوک میں ان کے سامنے ہزاروں فوجی سرخ رنگ کے بینرز اٹھائے مارچ کرتے ہوئے گزرے جبکہ ٹینکوں اور میزائلوں کی نمائش بھی کی گئی ہے۔

کئی ٹینک اس بلند مقام کے قریب سے گزرے جہاں کم یونگ ان نے خطاب کرنا تھا اور اس دوران لڑاکا طیاروں نے فلائنگ پاسٹ کرتے ہوئے فضا میں 70 کا ہندسہ بنایا۔

اس موقع پر کم یونگ ان کا کہنا تھا کہ ’ہماری فوج کی متحد فورسز، عوام اور مضبوط جذبے کی وجہ سے تنہائی اور شاہی پابندیوں کو ختم کرنے میں کامیاب ہوئے جس کی وجہ سے دشمن شدید غصے اور خوف میں مبتلا ہو گیا ہے۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption طیاروں نے فلائنگ پاسٹ کے دوران فضا میں 70 کا ہندسہ بنایا

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’پارٹی کے انقلابی فوجی ساز و سامان کا مطلب ہے کہ ہم امریکی شاہوں کی جانب سے شروع کی جانے والی کسی بھی جنگ کے لیے تیار ہیں۔‘

پریڈ کے دوران ہزاروں عام شہریوں جن میں سکول کے بچے بھی شامل تھے نے رقص کیا۔

سرکاری ٹی وی نے اس تقریب کو براہ راست نشر کیا اور اس دوران جذباتی تبصرے بھی کئے گئے۔

پیونگ ینگ میں بی بی سی کے نامہ نگار سٹیو ایوانز کا کہنا ہے کہ یہ پریڈ شمالی کوریا کے رہنما کے الفاظ کی طرح ایک پیغام ہے جس کا مطلب اس بات کی طرف توجہ دلانا ہے کہ یہاں ایک فوج ہے اور وہ متحد فوج ہے۔

یہ تقریبات مزید جاری رہنے کا امکان ہے اور پیونگ ینگ کے رہائشیوں کو شہر کے کئی چوکوں میں شمع کے ساتھ پریڈ کرنے کی تیاریاں کرتے دیکھا گیا ہے۔اس پریڈ کا آغاز شام کو ہوگا۔

اسی بارے میں