بلال آصف کا بایومکینک تجزیہ 19 اکتوبر کو

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بلال آصف بھی تقریبا 30 سال کی عمر میں پاکستان کی کرکٹ ٹیم میں جگہ بنانے میں کامیاب ہوئے تھے

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے آف سپنر بلال آصف کے بولنگ ایکشن کا بایومکینک ٹیسٹ 19 اکتوبر کو چنئی کی سری راما چندرا یونیورسٹی میں ہوگا۔

دوسری جانب بلال آصف کو انگلینڈ کے خلاف دوسرے ٹیسٹ سے قبل دبئی بلائے جانے کا بھی امکان ہے۔

بلال آصف اٹھارہ اکتوبر کو بھارت روانہ ہونگے۔

یاد رہے کہ بلال آصف کا بولنگ ایکشن اسی ماہ پاکستان اور زمبابوے کے درمیان ہرارے میں ہونے والے تیسرے اور آخری ون ڈے انٹرنیشنل میں رپورٹ ہوا تھا۔

اس میچ میں انھوں نے صرف 25 رنز دے کر پانچ وکٹیں حاصل کی تھیں اور مین آف دی میچ رہے تھے۔

آئی سی سی کے قوانین کے مطابق مشکوک بولنگ ایکشن کے حامل بولر کو بایومکینک تجزیے کے لیے چودہ دن دیے جاتے ہیں۔

آئی سی سی کے قوانین کے مطابق بایو مکینک تجزیے کی رپورٹ آنے تک مشکوک بولنگ ایکشن کے حامل بولر کو بولنگ کی اجازت ہوتی ہے۔

اس سے قبل پاکستان محمد حفیظ اور سعید اجمل کے بولینگ ایکشن کو بھی مشکوک قرار دے کر ان پر بولنگ کرنے کی پابندی عائد کی دی گئی تھی۔

سیعد اجمل کو اپنا بولنگ ایکشن کلیئر کرانے کے لیے اپنا انداز ہی بدلنا پڑا جس سے ان کی بولنگ ماضی کی طرح کارگر نہیں رہی۔

اسی بارے میں