منصوبہ ساز کی کزن حسنہ ’خودکش بمبار‘ نہیں تھیں

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption استغاثہ نے تصدیق کی ہے کہ لاش 26 سالہ حسنہ آیت بوالحسن کی ہے جو بدھ کے آپریشن کے بعد رات کو ملی ہے

فرانسیسی حکام نے وضاحت کی ہے کہ پیرس حملوں کا منصوبہ ساز کی 26 سالہ کزن حسنہ آیت بوالحسن نے اپنے آپ کو خودکش حملے میں نہیں اڑا تھا۔

جمعے کو استغاثہ کا کہنا ہے کہ پیرس کے مضافاتی علاقے ساں ڈنی میں پولیس کی چھاپہ مار کارروائی کے بعد ایک تیسری لاش برآمد کی گئی ہے۔

استغاثہ نے تصدیق کی تھی کہ لاش 26 سالہ حسنہ آیت بوالحسن کی ہے جو بدھ کے آپریشن کے بعد رات کو ملی ہے۔

اباعود کی ہلاکت کے بعد کچھ اہم سولات

دہشت گردی کے خطرات: ’یورپ کی فوری بیداری ضروری‘

اس سے پہلے حکام کی جانب سے خیال کیا جا رہا تھا کہ پولیس کی کارروائی کے وقت حسنہ آیت بوالحسن نے اپنے آپ کو خودکش حملے میں اڑا دیا تھا۔

تاہم اب حکام کا کہنا ہے کہ حسنہ کی بجائے خودکش بمبار ایک مرد تھا۔

فرانسیسی تفتیش کاروں کا کہنا ہے کہ پیرس حملوں کا منصوبہ ساز مراکشی نژاد بیلجیئن شدت پسند عبدالحمید اباعود تھا، جسے ساں ڈنی میں پولیس چھاپے کے دوران ہلاک کیا گیا تھا۔

گذشتہ جمعے کی رات پیرس کے ان علاقوں میں سلسلہ وار حملے ہوئے جہاں زیادہ تر لوگ رات کے وقت جاتے ہیں۔

ان حملوں میں کم سے کم 129 افراد کی ہلاکت کی اطلاع ہے جبکہ درجنوں کی حالت تشویش ناک ہے۔

شدت پسند تنظیم دولت اسلامیہ نے حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

پیرس پر حملوں کے بعد ملک میں فوری طور ہنگامی حالت کے نفاذ کے تحت مظاہروں پر پابندی لگا دی گئی ہے لیکن درجنوں فرانسیسی فنکار اور ثقافتی شخصیات نے لوگوں کو رات کے نو بج کر 20 منٹ پر ’بہت زیادہ شور مچانے اور روشنی کرنے‘ کو کہا ہے۔ یہ حملے اسی وقت شروع ہوئے تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ no credit
Image caption حسنہ کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ وہ عبدالحمید اباعود کی کزن تھیں اور انھوں نے اپنے آپ کو خودکش حملے میں اڑا دیا تھا

استغاثہ نے سات گھنٹوں پر محیط پولیس کارروائی میں ہلاک ہونے والے تین مشتبہ افراد کی لاشوں میں سے دو کی شناخت کی تصدیق کر لی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ حسنہ آیت بوالحسن کا پاسپورٹ ان کی لاش کے پاس ملا ہے۔

یورپی یونین کے وزرا جمعے کو برسلز میں مل رہے ہیں جہاں وہ پاسپورٹ کے بغیر داخلے کے شینگن خطے کی بیرونی سرحدوں پر سخت کنٹرول عائد کرنے کے علاوہ دیگر سکیورٹی مسائل پر بھی بات چیت کریں گے۔

اسی بارے میں