بیلجیئم: ایک شخص پر پیرس حملوں میں ملوث ہونے کی فرد جرم عائد

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

تازہ ترین اطلاعات کے مطابق بیلجیئم میں جن مشتبہ افراد کو گرفتار کیاگیا تھا ان میں سے ایک پر پیرس حملوں میں ملوث ہونے کی فرد جرم عائد کر دی گئی ہے۔

ابتدائی اطلاعات کے مطابق مذکورہ شخص کو اتوار کی رات حراست میں لیا گیا تھا۔

بیلجیئم کے وزیر اعظم نے کہا ہے کہ برسلز میں ممکنہ دہشت گردی کی کارروائی کے خدشے کے باعث ہائی الرٹ رہے گا۔

بیلجیئم میں آپریشن،’16 گرفتار، صالح کی تلاش جاری‘

بیلجیئم میں پولیس کو ’کئی مشتبہ افراد‘ کی تلاش

پیرس حملوں کا مبینہ ملزم گرفتار

پیرس کے ایک یرغمالی کی کہانی

تاہم برسلز میں حکام کا کہنا ہے کہ پیر کو بند کی گئی میٹرو اور سکولوں کو دوبارہ بدھ کے روز کھول دیا جائے گا۔

اس سے قبل بیلجیئم میں حکام کا کہنا تھا کہ پولیس نے مشتبہ افراد کے خلاف آپریشن کے دوران 16 افراد کو گرفتار کیا تاہم ان میں پیرس حملوں میں مبینہ طور پر ملوث شدت پسند صالح عبدالسلام شامل نہیں۔

اتوار کو میڈیا بریفنگ کے دوران بیلجیئن پراسیکیوٹر ایرک وین ڈر سپٹ نے بتایا تھا کہ 19 سرچ آپریشن برسلز میں جبکہ مزید تین شارلروا شہر میں کیے گئے۔

ان کا کہنا تھا کہ مولن بیک میں آپریشن کے دوران دو گولیاں بھی چلیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ان کارروائیوں کے دوران کوئی اسلحہ یا دھماکہ خیز مواد برآمد نہیں ہوا۔

دوسری جانب فرانس کی پولیس کا کہنا ہے کہ ان کو پیرس کے مضافاتی علاقے سے ایک شے ملی ہے جو بارودی بیلٹ سے مشابہت رکھتی ہے۔ اس بیلٹ نما شے کا جائزہ لیا جا رہا ہے۔

اسی بارے میں