رمادی کے اہم ڈسٹرکٹ پر عراقی فوج کا دوبارہ ’کنٹرول‘

رمادی تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption عراقی فوج کئی مہینوں سے شہر پر حملہ کرنے کی تیاری کر رہی تھی

اطلاعات کے مطابق عراقی فورسز نے رمادی شہر کے ایک اہم ڈسٹرکٹ کو دولتِ اسلامیہ کے جہادیوں سے خالی کرا لیا ہے۔

انسدادِ دہشت گردی کی فورسز کا کہنا ہے کہ اس نے شدید لڑائی کے بعد جنوب مغربی علاقے تمیم کو دولتِ اسلامیہ کے قبضے سے آزاد کرا لیا ہے۔

فوج اور ملیشیا کے اراکین رمادی پر حتمی حملے کے لیے کئی مہینوں سے تیاری کر رہے تھے اور حال ہی میں انھوں نے شہریوں سے کہا تھا کہ وہ شہر کے مرکزی حصے کو خالی کر دیں۔

دولتِ اسلامیہ نے مئی میں عراقی فوج کو ایک ہتک آمیز شکست دے کر رمادی پر قبضہ کیا تھا۔

گذشتہ ماہ حکومتی فوج نے فلسطین پل پر قبضے کے بعد شہر کے گرد حصار بنا لیا تھا۔ یہ پل شمال مغرب میں دریائے فرات پر واقع ہے۔

اس کی وجہ سے بغداد سے 90 کلو میٹر دور رمادی شہر میں موجود دولتِ اسلامیہ کے جنگجو اپنے دوسرے مضبوط گڑھ انبار صوبے اور شام سے کٹ گئے تھے۔

امریکی فوج کا کہنا ہے کہ رمادی میں 600 سے لے کر 1000 کے قریب دولتِ اسلامیہ کے جنگجو موجود ہیں۔

اس کا کہنا ہے کہ جنگجوؤں نے شہر کے گرد بارودی سرنگیں بچھا کر مضبوط دفاعی نظام بنایا ہوا ہے۔

اسی بارے میں