ڈونلڈ ٹرمپ کا اسرائیل کا دورہ ملتوی

تصویر کے کاپی رائٹ PA
Image caption ڈونلڈ ٹرمپ نے سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر لکھا کہ ان کا اسرائیل کا دورہ ’اب میرے صدر بننے کے بعد کسی اور تاریخ پر کیا جائے گا‘

امریکی ریپبلیکن پارٹی کے صدارتی امیدوار کی دوڑ میں شامل ڈونلڈ ٹرمپ نے مسلمانوں کے امریکہ میں داخلے پر پابندی کے تنازعے پر اپنا اسرائیل کا دورہ ملتوی کر دیا ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر لکھا کہ اسرائیل کا دورہ ’اب میرے صدر بننے کے بعد کسی اور تاریخ پر کیا جائے گا۔‘

اس ہفتے کی ابتدا میں انھوں نے مسلمانوں کے امریکہ میں داخلے پر عارضی پابندی عائد کرنے کی تجویز پیش کی تھی۔

ڈونلڈ ٹرمپ کی تجویز کے بعد انھیں اسرائیلی وزیر اعظم بنیامن نیتن یاہو سمیت دنیا بھر سے شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے۔

ٹرمپ نے اپنا دورہ ملتوی کرنے کی تصدیق خبروں کے ایک ٹی وی چینل ’فاکس نیوز‘ کے ساتھ ایک انٹرویو میں کی ہے۔

ان کی جانب سے مسلمانوں کے امریکہ میں داخلے پر پابندی کا بیان کیلیفورنیا کے شہر سان برنارڈینو میں ایک مسلمان جوڑے کے حملے کے بعد آیا ہے۔

ماضی میں امریکہ میں رہنے والے کچھ یہودیوں نے ڈونلڈ ٹرمپ کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا جب انھوں نے اسرائیل کی غیر منقسم دارالحکومت کے طور پر یروشلم کی توثیق کرنے سے انکار کر دیا تھا۔

کئی دیگر ممالک کی طرح امریکہ یہ کہتے ہوئے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت نہیں تسلیم کرتا کہ یہ مسئلہ فلسطین اور اسرائیلیوں کے درمیان مذاکرات کے ذریعے ہی حل ہوگا۔

اسی بارے میں