’ناروے بہترین ملک، پاکستان کی ایک درجہ تنزلی‘

تصویر کے کاپی رائٹ Yana Gribovskaya
Image caption ناروے مسلسل 12 سال سے اس فہرست میں پہلے مقام پر آ رہا ہے

اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے یو این ڈی پی نے سنہ 2015 کے لیے انسانی ترقی کا عالمی اشاریہ جاری کر دیا ہے جس میں ناروے کو رہائش کے لیے دنیا کا بہترین ملک قرار دیا گیا ہے۔

انسانی ترقیاتی اشاریہ دنیا کے 188 ممالک میں اوسطا عمر، تعلیم، آمدنی اور معیارِ زندگی کی بنیاد پر تیار کیا جاتا ہے۔

ناروے معمر افراد کے لیے بہترین ملک

جمعرات کو اس انڈیکس کے اجرا کے موقع پر اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ ’انسانی ترقی کا اشاریہ اس بات پر زور دینے کے لیے تیار کیا گیا ہے کہ کسی ملک کی ترقی کی آخری کسوٹی اس کے لوگ اور ان کی صلاحیتوں کو ہونا چاہیے، نہ کہ اسے صرف اقتصادی ترقی سے ناپا جائے۔

ناروے مسلسل 12 سال سے اس فہرست میں پہلے مقام پر آ رہا ہے۔

تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق ناروے میں لوگوں کی اوسط عمر 81.6 سال ہے جبکہ وہاں کے عوام اوسطاً ساڑھے 17 سال تعلیم حاصل کرتے ہیں۔

فہرست میں ناروے کے بعد بالترتیب آسٹریلیا، سوئٹزرلینڈ، ڈنمارک، ہالینڈ، جرمنی، آئرلینڈ، امریکہ، کینیڈا اور نیوزی لینڈ جیسے ممالک کے نام شامل ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ BBC World Service
Image caption اقوامِ متحدہ کے مطابق پاکستان میں آٹھ کروڑ 30 لاکھ سے زیادہ افراد غربت کا شکار ہیں

برطانیہ کو 14 ویں مقام پر رکھا گیا ہے جبکہ دنیا کی دو بڑی معیشتیں چین اور بھارت اس فہرست میں بالترتیب 90 اور 130ویں نمبر پر ہیں۔

بھارت کے علاوہ دیگر جنوبی ایشیائی ممالک میں سری لنکا کو 73 واں، بنگلہ دیش کو 142واں، نیپال کو 145 واں، پاکستان کو 147 واں اور افغانستان کو 171 واں مقام دیا گیا ہے۔

اس سال پاکستان کے مقام میں مزید ایک درجے کی تنزلی آئی ہے تاہم یہاں ہیومن ڈویلپمنٹ انڈیکس کی قدر میں 0.001 کا اضافہ ہو ہے اور اب یہ قدر 0.538 ہے جو بدترین معیار کے قریب ہے۔

انڈیکس کے مطابق پاکستان میں 15 برس یا اس سے زیادہ عمر کے افراد میں بےروزگاری کی شرح 48 اعشاریہ چار فیصد کے قریب ہے جبکہ ملک میں آٹھ کروڑ 30 لاکھ سے زیادہ افراد یعنی ملک کی 45 فیصد سے زیادہ آبادی غربت کا شکار ہے۔

سنہ 2015 کے انڈیکس میں سب سے آخری مقام پر افریقی ملک نائجر ہے جبکہ اس سے پہلے مرکزی افریقی جمہوریہ، اریٹیریا، چاڈ اور برونڈی کو رکھا گیا ہے۔

اسی بارے میں