امریکہ میں شدید طوفان، ہلاکتوں کی تعداد 18 ہوگئی

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption الاباما میں ٹوئسٹر اور آسمانی بجلی گرنے سے بہت تباہی ہوئی ہے

امریکہ کی وسط مغربی ریاستوں میں تقریباً ایک ہفتے سے جاری شدید طوفان، بارشوں اور سیلاب کے نتیجے میں ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد اب کم از کم 18 ہوگئی ہے۔

بینٹن کاؤنٹی میں والے طوفان کے بعد سے لاپتہ ایک شخص اور ایک خاتون کی لاشیں مل گئی ہیں جس کے بعد مسی سپی میں ہلاکتوں کی تعداد دس تک پہنچ چکی ہے۔

ٹینیسی میں چھ افراد ہلاک ہوئے ہیں جبکہ آرکنساس اور الاباما میں ایک، ایک ہلاکت ہوئی ہے۔

امریکہ میں شدید طوفان سے چھ افراد ہلاک، متعدد زخمی

امریکہ میں شدید طوفان سے 11 افراد ہلاک، متعدد زخمی

حکام کا کہنا ہے کہ اوکلاہوما اور ٹیکساس میں ’تاریخی برفباری‘ یعنی 16 انچ برف پڑ سکتی ہے۔

ماہرین موسمیات نے اس طوفان کو’انتہائی خطرناک‘ قرار دیا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption طوفان سے مسی سپی میں درخت اکھڑ گئے ہیں اور سینکڑوں مکانات تباہ ہو چکے ہیں

حکام کا کہنا ہے کہ طوفان کی وجہ سے شمالی مسی سپی میں سات، ٹینیسی میں تین جبکہ آرکنساس میں ایک شخص ہلاک ہوا۔

اطلاعات کے مطابق طوفان کی تیز ہواؤں نے مکانوں کو بھی شدید نقصان پہنچایا ہے۔

مسی سپی میں تقریباً 400 مکانات جزوی یا مکمل طور پر تباہ ہو چکے ہیں جبکہ زخمیوں کی تعداد 56 تک پہنچ گئی ہے۔

ماہرین موسمیات نے کینٹکی، ایلاباما، انڈیانا، الینوئے اور مزوری کی ریاستوں میں کرسمس سے پہلے خراب موسم کی پیش گوئی کی تھی۔

اوکلاہاما میں طوفانوں کی پیشن گوئی کے مرکز کے مطابق صورت حال ’انتہائی خطرناک‘ ہے۔

امریکہ میں کرسمس سے قبل خراب موسم کوئی نئی بات نہیں ہے۔ ایک سال قبل بھی جنوبی مشرقی مسی سپی میں کرسمس کے موقعے پر آنے والے طوفان میں کم از کم پانچ افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہو گئے تھے۔

سنہ 2012 میں بھی کرسمس کے موقعے پر آنے والے طوفانوں نے ٹیکسس سے لے کر ایلاباما تک تباہی مچائی تھی۔

اسی بارے میں