قاہرہ کے نواح میں بم دھماکہ، چھ اہلکاروں سمیت نو ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption مصر میں سنہ 2013 کے بعد سے سکیورٹی فورسز پر اس طرح کے حملے ہوتے رہے ہیں

مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں شدت پسندوں کے ٹھکانے پر چھاپے کے دوران بم دھماکے سے چھ پولیس اہلکاروں سمیت کم ازکم نو افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

مقامی پولیس کے سربراہ سمیت 13 سے زائد افراد دھماکے میں زخمی بھی ہوئے ہیں۔

سکیورٹی ذرائع کے مطابق دھماکے اُس وقت ہوا جب پولیس افسران پر مشتمل ایک ٹیم نے اہرامِ مصر کے قریبی علاقے میں واقع ایک اپارٹمنٹ میں چھاپہ مارا۔

اس سے قبل جمعرات کو مصر کے شمالی شورش زدہ علاقے جزیرہ نما سینا میں ایک حملے میں پانچ پولیس اہلکار ہلاک ہوئے تھے۔

یہ حملہ العریش نامی شہر میں پولیس کی چوکی پر کیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ مصر میں سنہ 2013 میں اسلام پسند رہنما محمد مرسی کی حکومت کو برطرف کیے جانے کے بعد سے سکیورٹی فورسز پر اس طرح کے حملے ہوتے رہے ہیں۔

جس کے جواب میں حکومت کی جانب سے اس علاقے میں فضائی اور زمینی کارووائیاں کی جاتی رہی ہیں۔

مصر میں 25 جنوری کو سنہ 2011 میں آنے والے اس انقلاب کی پانچویں سالگرہ منائی جا رہی جس کے نتیجے میں ایک عرصے سے اقتدار کی مسند پر براجمان صدر حُسنی مبارک کی حکومت کا خاتمہ ہوا تھا۔

اس موقع پر ملک کی موجودہ حکومت نے سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے ہیں۔

اسی بارے میں