شادی پر روایتی رقص دیکھ کر دلھن آبدیدہ

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

نیوزی لینڈ میں شادی کی ایک تقریب میں روایتی ہاکا رقص دیکھنے پر دلھن کے آبدیدہ ہونے کی ویڈیو اب انٹرنیٹ پر ایک کروڑ 30 لاکھ مرتبہ دیکھی جا چکی ہے۔

عالیہ اور بنیمین آرمسٹرانگ کی شادی کی تقریب پر اس ماؤری رقص کو بڑے پیمانے پر سوشل میڈیا پر شیئر کیا جا رہا ہے۔

21 سالہ عالیہ نے بی بی سی کو بتایا کہ وہ رقص سے ’بہت متاثر‘ ہوئی تھیں۔

انھوں نے کہا کہ ہاکا رقص ان کے شوہر کے اہل خانہ کی طرف سے عزت افزائی تھی اور یہ کہ انٹرنیٹ پر بعض لوگوں کا کہنا غلط ہے کہ یہ دراصل ان کے شوہر کو دھمکانے کی کوشش تھی۔

انھوں نے کہا: ’ان کے خاندان میں مرد بہت طاقتور ہیں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Facebook
Image caption عالیہ اور بنیمین آرمسٹرانگ کی شادی کی تقریب پر اس ماؤری رقص کو بڑے پیمانے پر سوشل میڈیا پر شیئر کیا جا رہا ہے

ہاکا رقص میں چیخنا چلانا، بدن کو تھپڑ مارنا اور چہرے کے تاثرات کو بڑھا چڑھا کر پیش کرنا شامل ہوتا ہے۔

روایتی ماؤری معاشرے میں اس رقص کو دشمن کو دھمکانے کے لیے پیش کیا جاتا ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ جشن اور شادی کی تقریبات میں بھی استعمال کیا جاتا ہے۔

یہ ویڈیو گذشتہ ہفتے آک لینڈ میں جوڑے کی شادی کی تقریب میں لی گئی تھی۔

عالیہ نے کہا: ’میں ان کے ساتھ رقص میں شامل ہونے کا تو سوچ رہی تھی لیکن پھر میں نے اپنی ایک سہیلی کو اس میں شامل ہوتے ہوئے دیکھا۔ پھر میں بھی رقص میں شامل ہو گئی کیونکہ میں وہ پیار اور عزت واپس ظاہر کرنا چاہتی تھی۔ میں بہت زیادہ متاثر ہوئی تھی۔‘

ماؤری معاشرے میں عام طور پر خواتین یہ رقص نہیں کرتیں، لیکن عالیہ کا کہنا ہے کہ شادی کی تقریبات میں وہ ان میں شامل ہو سکتی ہیں۔

تقریباً تین منٹ کی اس ویڈیو کے بعد دولھا دلھن رقص کرنے والے اپنے دوستوں کو آبدیدہ ہو کر ملتے ہوئے دکھائی دیتے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Westone Productions
Image caption دلھن کی ایک سہیلی بھی رقص میں شامل ہو گئی

ہاکا رقص کا اہتمام 23 سالہ دولھے کے بھائی اور ’بیسٹ مین‘ یعنی سب سے اچھے دوست کی جانب سے کیا گیا تھا۔

عالیہ نے کہا: ’بین ایک ماؤری ہے، شاید مجھ سے بھی زیادہ ماؤری۔ اس کی رنگت گوری ہے اس لیے کچھ لوگوں نے سوشل میڈیا پر کہا کہ ’اسے دلھن پر دباؤ نہیں ڈالنا چاہیے‘ لیکن وہ لوگ اصل میں بین کے اپنے ہی خاندان کے لوگ تھے۔‘

آک لینڈ میں رہنے والے جوڑے نے رقص کی ویڈیو اپنے دوستوں کے لیے شیئر کی تھی اور اس کی مقبولیت سے وہ بہت حیران ہیں۔

عالیہ نے کہا: ’ہم نے کبھی نہیں سوچا تھا کہ یہ اتنی مشہور ہو جائے گی لیکن کل جب میں نے اپنا فون صرف پانچ منٹ کے لیے چھوڑ کر دیکھا تو مجھے اتنی زیادہ لائکس مل رہی تھیں۔‘

سوشل میڈیا پر لوگوں نے زیادہ تر رقص کرنے والوں کے جوش و جذبے کے بارے میں تبصرے کیے۔

ٹوئٹر پر ایک صارف ہند مکی نے لکھا: ’ہاں، اس ویڈیو نے میری آنکھیں بھی بھگو دیں۔‘

اسی بارے میں