شمالی کوریا کے ’ناقابل قبول‘ میزائل تجربے کی شدید مذمت

تصویر کے کاپی رائٹ KCNA
Image caption دو ہفتے قبل سلامتی کونسل نے شمالی کوریا پر سخت ترین پابندیاں عائد کی تھیں

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے شمالی کوریا کی جانب سے بیلسٹک میزائل داغنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اس اسے ’ناقابل‘ قبول قرار دیا ہے۔

ایک متفتہ بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ ’اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کی کھلی خلاف ورزی ہے۔‘

بیان میں شمالی کوریا کے اتحادی چین سمیت دیگر ممالک نے شمالی کوریا کو اقوام متحدہ کی خلاف وزی پر مشتمل مزید اقدمات کرنے سے اجتناب کرنے پر زور دیا ہے۔

سلامتی کونسل کی جانب سے یہ ردعمل شمالی کوریا نے حالیہ درمیانے فاصلے تک مار کرنے والے دو بیلسٹک میزائلوں کے تجربے کے بعد سامنے آیا ہے۔

خیال رہے کہ دو ہفتے قبل سلامتی کونسل نے شمالی کوریا پر سخت ترین پابندیاں عائد کی تھیں۔

سلامتی کونسل کی جانب سے یہ اقدامات پیانگ یانگ کے چوتھے جوہری تجربے اور مبینہ طور پر ایک بیلسٹک میزائل کے تجربے کے بعد اٹھائے گئے تھے۔

چند روز قبل شمالی کوریا کے رہنما کم جونگ ان نے مزید بیلسٹک میزائل اور جوہری ہتھیاروں کے تجربات کرنے کا حکم دیا تھا۔

دوسری جانب جانز ہوپکنز یونیورسٹی کے یو ایس کوریا انسٹی ٹیوٹ کا کہنا ہے کہ شمالی کوریا کسی بھی وقت ایک اور جوہری تجربہ کر سکتا ہے۔

خبررساں ادارے اے ایف پی کے مطابق تھنک ٹینک کا کہنا ہے کہ پیانگ یانگ کے پنگے ری میں مرکزی تجرباتی مقام کی سیٹلائٹ سے حاصل ہونے والی تصاویر میں اس علاقے میں سرگرمیوں میں تیزی دیکھی جارہی ہے۔

اسی بارے میں