ہم ہر ممکن مدد کریں گے: اوباما

بیلجیئم کے دارالحکومت برسلز کے ایئر پورٹ اور میٹرو سٹیشن پر دہشت گرد حملوں کی عالمی سطح پر مذمت کی جا رہی ہے اور کئی ممالک کے رہنماؤں نے بیلجیئم کی حکومت اور عوام کے نام پیغامات بھیجے ہیں۔

امریکی صدر براک اوباما کا کہنا تھا کہ ’ ہم اپنے دوست اور اتحادی ملک بیلجیئم کی ہر ممکن مدد کریں گے تا کہ ان لوگوں کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جا سکے جو ان حملوں کے ذمہ دار ہیں۔‘

فرانس کے وزیرِ اعظم مینوئل والز نے کہا کہ ’ہم حالت جنگ میں ہیں۔ گذشتہ چند ماہ سے یورپ میں ہمیں جنگ کے حالات کا سامنا ہے اور ہم پر جنگ مسلط کی جا رہی ہے۔‘

حملوں کا شکار ہونے والے ملک بیلجیئم کے وزیر اعظم نے حملوں کے بعد اپنے بیان میں کہا کہ ’ہمیں احساس ہے کہ ہمیں ایک برے وقت کا سامنا ہے، لیکن ہمیں اس لمحے میں پر سکون رہنا ہے اور یک جہتی کا مظاہرہ کرنا ہے۔‘

اٹلی کے وزیر اعظم ماتیو رینزی کے بقول ’یہ حملہ آور انہی جگہوں سے آئے جن کو نشانہ بنایا گیا تھا۔ یہ خطرہ ایک عالمی خطرہ ہے، لیکن آج کے حملہ آور مقامی لوگ ہی تھے۔‘

روس کے صدر ولادی میر پوتن کا کہنا تھا کہ ’ہم دہشتگردی اور اس کے خلاف جنگ کے حوالے سے بار بار بات کر چکے ہیں اور اس کا موثر مقابلہ صرف مشترکہ کوششوں سے ہی ممکن ہے۔‘

اسی بارے میں