’صالح کے فلیٹ سے جوہری مرکز کی دستاویزات برآمد‘

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption صالح عبدالسلام کو چار ماہ کی تلاش کے بعد گرفتار کیا گیا

اطلاعات کے مطابق پیرس حملوں کے ملزم صالح عبدالسلام کے برسلز کے فلیٹ سے جرمنی کے جولچ نیوکلیئر ریسرچ سینٹر کی دستاویزات برآمد ہوئی تھیں۔

صالح عبدالسلام کو برسلز میں ہونے والے دھماکوں سے چار روز قبل گرفتار کیاگیا تھا۔ میڈیا نیٹ ورک آر این ڈی کے مطابق ان کے فلیٹ سے جرمنی کے جوہری ریسرچ سینٹر کی بارے میں دستاویزات کے پرنٹ آؤٹ اور اس سینٹر کے سربراہ کی تصاویر بھی برآمد ہوئیں۔

واضح رہے کہ جولچ ریسرچ سینٹر کو ڈی کمیشن کر دیا گیا تھا اور جرمنی کے حکام کا کہنا ہے کہ تمام ایٹمی پلانٹس محفوظ ہیں۔

سینیئر جرمن حکام کا کہنا ہے کہ ان کے پاس اس بارے میں کوئی معلومات نہیں ہیں۔

تاہم آر این ڈی نے جرمنی کی پارلیمنٹری کنٹرول کمیٹی کے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ ان کو مارچ میں جرمنی کی اندرونی انٹیلیجنس کے سربراہ نے اس حوالے سے بریفنگ دی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Belgian Police
Image caption استغاثہ کے مطابق 31 سالہ ابرینی کی سی سی ٹی وی فوٹیج موجود ہے جس میں وہ پیرس پر حملے سے قبل صالح عبدالسلام کے ساتھ دیکھے گئے

جولچ بیلجیئم کی سرحد سے 30 کلومیٹر کے فاصلے پر ہے۔

صالح عبدالسلام کو چار ماہ کی تلاش کے بعد گرفتار کیا گیا تھا۔ ان پر پیرس میں حملے کرنے کا الزام ہے جن میں 130 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

دوسری جانب برسلز میں ہونے والے دھماکوں میں مبینہ طور پر ملوث کئی افراد جمعرات کو عدالت میں پیش کیے جائیں گے۔

استغاثہ نے محمد ابرینی کی برسلز ہوائی اڈے کے تیسرے بمبار کے طور پر شناخت کی ہے۔ ابرینی نے پولیس کو بیان دیتے ہوئے کہا تھا کہ انھوں نے جان بوجھ کر تیسرا بم نہیں پھاڑا۔ ’میں کبھی شام نہیں گیا اور میں تو مکھی بھی نہیں مارتا۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption برسلز کی عدالت میں ملزمان کو لانے کے لیے سخت سکیورٹی انتظامات کیے گئے تھے

استغاثہ کے مطابق 31 سالہ ابرینی کی سی سی ٹی وی فوٹیج موجود ہے جس میں وہ پیرس پر حملے سے قبل صالح عبدالسلام کے ساتھ دیکھے گئے اور برسلز میں دو ’سیف ہاؤسز‘ میں ان کی انگلیوں کے نشان بھی پائے گئے۔

برسلز کی عدالت میں ملزمان کو لانے کے لیے سخت سکیورٹی انتظامات کیے گئے تھے۔ ابرینی کے علاوہ اسامہ کریم، بلال المخوقی اور ہیرو بی ایم کو بھی عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

سی سی ٹی وی فوٹیج میں اسامہ کریم کو سوٹ کیس خریدتے ہوئے دیکھا گیا ہے جن میں برسلز کے ہوائی اڈے میں بم لے جائے گئے۔

اسی بارے میں