36 سال بعد کانگریس کے اجلاس کی اہمیت کیا

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

شمالی کوریا کا کہنا ہے کہ اس کی حکمران پارٹی اگلے ماہ تقریباً 36 سال بعد پہلی مرتبہ اپنی اعلیٰ کانگریس کا اجلاس منعقد کرے گی۔ یہ اجلاس پیانگ یانگ میں 6 مئی کو ہوگا۔

شمالی کوریا کے امور کے ماہر مائیکل میڈن نے اس بات پر روشنی ڈالنے کی کوشش کی ہے کہ اس غیر معمولی اجلاس کی کیا اہمیت ہے۔

یہ اجلاس کیوں منعقد کیا جا رہا ہے؟

یہ اجلاس شمالی کوریا کے موجودہ سربراہ کم جانگ اُن کو اپنی جانشینی کو رسمی شکل دینے کا موقع فراہم کرے گا۔ اس کے ساتھ وہ اپنا منشور یا ایجنڈا بھی اجاگر کر سکیں گے۔

اس اجلاس میں ریاست کے مختلف ستونوں کے درمیان توازن پیدا کرنے کا موقع ملے گا۔

Image caption اجلاس میں اگلے اجلاس تک جماعت کی پالیسیوں کا اعلان بھی کیا جاتا ہے

آخر اتنا عرصہ اجلاس کیوں منعقد نہیں کیا گیا؟

حکمراں جماعت کی کانگریس کا آخری اجلاس سنہ 1980 میں منعقد ہوا تھا۔جماعت کے منشور کے مطابق کانگریس جماعت کا اعلیٰ ترین ادارہ ہے اور اس کا اجلاس ہر پانچ سال بعد منعقد کیا جانا چاہیے۔

لیکن جماعت کے منشور میں یہ شک موجود ہے کہ اگر کانگریس کا اجلاس منعقد نہیں ہو سکتا تو اس کے جگہ جماعت کا اجلاس بلایا جا سکتا ہے۔ جیسا کہ سنہ 2010 میں بلایا گیا تھا۔

یہ اجلاس کیوں منعقد کیا جاتا ہے؟

کانگریس کے اجلاس میں پارٹی کے اداروں کے لیے لوگوں کا چناؤ کیا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ اجلاس میں جماعت کے منشور پر غور کرنے کے بعد اس میں تبدیلی بھی کی جاسکتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption آخری کانگریس کا اجلاس اکتوبر سنہ 1980 میں ہوئی

جماعت کے منشور میں یہ بتایا گیا ہے کہ جماعت کو کیسے منظم کیا جائے اور اس میں حکومت کے مختلف اداروں اور جماعت کے مابین تعلقات کا تعین بھی کیا گیا ہے۔

اجلاس میں اگلے اجلاس تک جماعت کی پالیسیوں کا اعلان بھی کیا جاتا ہے۔

اجلاس کا ایجنڈا کیا ہے؟

کانگریس کے اجلاس کا آغاز جماعت کی تاریخ بشمول اس کے بانی کی خدمات پر نظر ڈالنے سے ہوگا۔ اس میں جماعت کی سینٹرل کمیٹی کی کارکردگی کا جائزہ لیا جائے گا۔ اجلاس میں جماعت کی تنظیمِ نو کے حوالے سے بھی فیصلے کیے جائیں گے۔

اجلاس میں کم جانگ اُن کو جماعت کے اعلیٰ ترین عہدے کے لیے منتخب کیا جائے گا۔

1980 کے اجلاس میں کیا ہوا تھا؟

جماعت کی کانگریس کا آخری اجلاس سنہ 1980 میں ہوا تھا جس میں موجودہ سربراہ کے والد کم جانگ اِل کو جماعت کے بانی اور ان کے والد کم اِل سنگ کا باقاعدہ جانشین مقرر کیا گیا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ
Image caption پچھلے ہفتے شمالی کوریا نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ انہوں نے آب دوز سے میزائل داغے’ کولڈ لانچ‘ کی ٹیکنولوجی کے زریعے کیا

اجلاس میں کون شرکت کرے گا؟

اس اجلاس میں مقامی سطح یعنی مختلف شہروں، قصبوں اور صوبوں میں جماعت کے انتخابات میں منتخب ہونے والے پارٹی عہدادران شرکت کریں گے۔

جماعت کے منتخب عہدیدار اپنے حکومتی عہدے اور مرتبے سے قطح نظر ایک دوسرے کے برابر تصور کیے جاتے ہیں۔ جس کا مطلب ہے کہ ایک حکومتی ادارے میں بطور مزدور کام کرنے والا شخص اس اجلاس میں شریک اس ادارے کے سربراہ کے برابر تصور کیا جاتا ہے اور اسے اپنے سربراہ پر مکمل تنقید کا اختیار حاصل ہے۔ لیکن اس اصول کا اطلاق کم جانگ اُن اور ان کے خاندان پر نہیں ہوتا۔

Image caption اس اجلاس کے نتیجے میں ہم شمالی کوریا کے حکمران طبقے کے بارے میں جان سکیں گے

کیا پالیسی میں کوئی بڑی تبدیلی ہوگی؟

جو لوگ یہ توقع کر رہے ہیں کہ اس اجلاس کے نتیجے میں شمالی کوریا کی پالیسیوں میں کوئی خاطرخواہ تبدیلی ہوگی ، شاید ان کو مایوسی ہو۔ لیکن کانگریس کے اجلاس میں یقیناً ایسے فیصلے کیے جاسکتے ہیں جن کے نتیجے میں ملک کی پالیسیوں میں ڈرامائی تبدیلیاں کی جاسکیں۔

اجلاس میں ہمیں ملک کے خلائی اور جوہری پروگرام کو جاری رکھنے، تعلیمی اور اقتصادی پالیسی کے بارے میں فیصلے دیکھنے کو ملیں گے۔

سب سے اہم بات یہ ہے کہ اس اجلاس کے نتیجے میں جماعت کے اندر گزشتہ چھ سالوں سے جاری ذاتی لڑائیاں ختم کی جاسکیں گی جن کے نتیجے میں کئی لوگوں کو موت کی سزائیں بھی ہوئی ہیں۔

اس اجلاس کے نتیجے میں ہم شمالی کوریا کے حکمران طبقے کے بارے میں جان سکیں گے۔

اسی بارے میں