عمرہ ویزے کی خلاف ورزی پر کارروائی

سعودی عرب میں حکام نے خبردار کیا ہے کہ عمرے کے ویزے کی معیاد ختم ہونے کے بعد زائرین کو ملک میں رہنے میں مدد دینے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔

بدھ کو یہ احکامات سعودی ڈائریکٹریٹ جنرل آف پاسپورٹس کی جانب سے جاری کیے گئے ہیں ۔ ان احکامات میں کہا گیا ہے کہ ایسے سعودی اور غیر ملکی افراد کو عمرے کی ادائیگی کے لیے جاری ہونے والے ویزہ کی معیاد ختم ہونے والے افراد کے مزید قیام میں معاونت کریں گے اور انھیں جرمانہ اور قید کی سزا دی جائے گی۔

٭ سعودی عرب:30 ہزار پاکستانی نئے قوانین سے متاثر

سعودی سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق اس غیر قانونی اقدام میں معاونت فراہم کرنے والے افراد کو کم سے کم چھ ماہ کی قید ہو سکتی اور ان پر ایک لاکھ سعودی ریال جرمانہ عائد کیا جائے گا۔

خبر رساں ایجنسی کے مطابق سعودی ڈائریکٹریٹ جنرل آف پاسپورٹس کا مزید کہنا تھا کہ عمرے کے ویزے کی معیاد ختم ہونے پر تارکینِ وطن افراد کو ملک بدر بھی کیا جا سکتا ہے۔

انھوں نے عمرے پر آنے والے افراد پر زور دیا کہ وہ اپنے ویزے کی معیاد ختم ہونے کے بعد ملک چھوڑ دیں۔

یاد رہے کہ لاکھوں کی تعداد میں مسلمان عمرہ کی ادائیگی کے لیے سعودی عرب آتے ہیں۔

حکام کے مطابق عمرہ کے ویزے پر آنے والے کئی افراد مقامی افراد کے تعاون سے غیر قانونی طور پر کام کرنا شروع کر دیتے ہیں۔

اسی بارے میں