ہو ہی نہیں سکتا کہ میں صدارتی امیدوار نہ ہوں: ہلیری

تصویر کے کاپی رائٹ epa

امریکہ کی ڈیموکریٹک جماعت کے لیے صدارتی امیدوار بننے کی دوڑ میں شامل ہلیری کلنٹن نے کہا ہے کہ برنی سینڈرز کا صدارتی امیدوار بننے کے امکانات نہیں ہیں۔

سی این این کو انٹرویو میں ہلیری کلنٹن نے کہا ’جماعت کی صدارتی امیدوار میں ہوں گی۔ یہ حتمی ہے اور یہ ہو ہی نہیں سکتا کہ میں صدارتی امیدوار نہ ہوں۔‘

ڈونلڈ ٹرمپ کا رپبلکن جماعت کے صدارتی امیدوار منتخب ہونے کے بعد برنی سینڈرز پر دباؤ ہے کہ وہ صدارتی امیدوار بننے کی دوڑ سے دستبردار ہو جائیں۔ لیکن برنی نے اعداہ کیا ہے کہ وہ پارٹی کنونشن تک س دوڑ میں رہیں گے۔

ہلیری کلنٹن کو برنی سینڈرز پر واضح برتری حاصل ہے۔

ڈیموکریٹک جماعت کو جماعت میں اتحاد کی فکر ہے کیونکہ نواڈا میں ہونے والے کنونشن میں سینڈرز کے حمایتیوں اور جماعت کے حکام کے درمیان جھگڑا ہو گیا تھا۔

سی این این کو دیے گئے انٹرویو میں ہلیری کلنٹن نے ڈونلڈ ٹرمپ کے بارے میں ہا کہ وہ صدر بننے کے اہل نہیں ہیں۔

انھوں نے کہا کہ اس کی وجہ یہ ہے کہ ٹرمپ نے امریکہ میں مسلمانوں کے آنے پر پابندی عائد کرنے کا کہا، نیٹو سے فاصلہ رکھنے کا کہا، برطانوی حکومت پر تنقید کی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption ڈونلڈ ٹرمپ کا رپبلکن جماعت کے صدارتی امیدوار منتخب ہونے کے بعد برنی سینڈرز پر دباؤ ہے کہ وہ صدارتی امیدوار بننے کی دوڑ سے دستبردار ہو جائیں

ہلیری کلنٹن نے ٹرم کو ’خطرناک‘ قرار دیا اور کہا کہ ان پر قومی سلامتی کے امور پر بھروسہ نہیں کیا جاسکتا جیسے کہ القاعدہ کے رہنما اسامہ بن لادن کو ہلاک کرنے کا آپریشن۔

یاد رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے حال ہی میں فوکس نیوز کو انٹرویو میں کہا تھا کہ انھیں اپنی انتخابی مہم پر ’افسوس‘ ہے لیکن ان کے بقول وہ اس کے بغیر کامیاب نہیں ہو سکتے تھے۔

جب ان سے پوچھا گیا کہ انھوں نے ان کے بارے میں طنز کرتے ہوئے ری ٹوئٹ میں ’بِمبو‘ کیوں کہا تھا، تو ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا: ’کیا میں نے ایسا کہا؟ او، میں معذرت خواہ ہوں۔‘

اسی بارے میں