تباہ شدہ مصری طیارے کے ملبے کی تصاویر جاری

مصری حکام نے جمعرات کو بحیرۂ روم میں حادثے کا شکار ہونے والے طیارے کے ملبے کی تصاویر جاری کی ہیں۔

مصر کی فوج کے مطابق طیارے کے ملبے کی تلاش کے دوران انھیں طیارے کا کچھ ملبہ ملا ہے جس میں لائف جیکٹس، طیارے کی نشستوں کے کچھ حصوں کے علاوہ ایسی اشیا ملی ہیں جن پر واضح طور پر ’ایجپٹ ایئر‘ لکھا دیکھا جاسکتا ہے۔

٭مصری طیارے کے حادثے سے پہلے کیبن میں دھواں٭ مصری سیاحت کی صنعت کے لیے مشکل وقت

ایجپٹ ایئر کی پرواز ایم ایس 804 پیرس سے قاہرہ جاتے ہوئے یونان کے جزیرے کیرپاتھوس کے قریب لاپتہ ہوگئی تھی۔ اس میں 66 افراد سوار تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Egyptian armed forces

اس سے قبل طیارے کو پیش آنے والے حادثے کی تحقیقات کرنے والے تفتیش کاروں نے کہا تھا کہ حادثے کا شکار ہونے سے قبل طیارے کے کیبن سے دھوئیں کے الرٹ ملے تھے۔

ایوی ایشن ہیرلڈ کی ویب سائٹ پر شائع رپورٹ کے مطابق طیارے کا سگنل منقطع ہونے سے چند منٹ قبل ٹوائیلٹ اور طیارے کے بجلی کے نظام میں دھوئیں کا پتہ چلا تھا۔

ایوی ایشن ہیرلڈ نے کہا ہے کہ انھیں ایئرکرافٹ کمیونیکیشن ایڈریسنگ اینڈ رپورٹنگ سسٹم (اے سی اے آر ایس) کے ذریعے تین آزاد ذرائع سے یہ تفصیلات ملی ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Egyptian armed forces

اس میں کہا گیا ہے کہ مقامی وقت کے مطابق دو بج کر 26 منٹ پر ایک ایئر بس اے 320 کے ٹوائیلٹ میں دھواں دیکھا گیا جس کے ایک منٹ بعد دھوئیں کا الرٹ جاری کیا گیا۔

طیارے کو پیش آنے والے حادثے بارے میں مصر کی سول ایوی ایشن کے وزیر نے کہا ہے کہ ’تکنیکی خرابی سے زیادہ دہشتگردی کا ممکنہ خطرہ زیادہ ہے۔‘

اسی بارے میں