تارکینِ وطن کی کشتی ڈوبنے کا منظر کیمرے میں محفوظ

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں

اطالوی بحریہ نے بحیرۂ روم میں تارکینِ وطن کی کشتی کے الٹنے کے خوفناک منظر کو کیمرے کی آنکھ میں محفوظ کر لیا۔

اطالوی بحریہ کی جانب سے یہ منظر کشتی پر موجود 562 افراد کو بچانے کی کوشش کے دوران محفوظ کیا گیا۔

تارکین وطن نے ایک امدادی جہاز کو دیکھنے کے بعد جلدی سے کشتی کے ایک جانب بھاگنا شروع کر دیا جس کے نتیجے میں بظاہر ان کی کشتی الٹ گئی اور پانچ افراد ہلاک ہوگئے۔

٭ ترکی کے قریب کشتی الٹنے سے 18 تارکینِ وطن ہلاک

٭ تارکین وطن کی کشتی کے حادثے میں 13 ہلاک، 13 لاپتہ

حکام نے نگرانی کرنے والی بیٹیکا نامی کشتی کے ذریعے سمندر میں لائف جیکٹس پھینکیں جب کہ کشتی کو بچانے کے لیے ایک اور جہاز بھیجا گیا۔

واضح رہے کہ یہ وہی کشتی ہے جس کے ذریعے بدھ کو ایک دوسرے واقعے میں 108 تارکینِ وطن کو ڈوبنے سے بچایا گیا تھا۔

حالیہ دنوں کے دوران غیر قانونی طور پر یورپ پہنچنے کی کوشش کرنے والے تقریباً چھ ہزار تارکینِ وطن کو بحیرۂ روم میں ڈوبنے سے بچایا گیا ہے۔

امدادی ایجنسیوں کا کہنا ہے کہ ترکی اور یورپی یونین کے مابین یورپ میں لوگوں کی بڑے پیمانے پر نقلِ مکانی روکنے کے معاہدے کے بعد لیبیا اور اٹلی کے درمیان تارکینِ وطن کے لیے سمندر کو پار کرنے کا یہ ایک اہم راستہ ہے۔

اسی بارے میں