تل ابیب میں فلسطینی حملہ آوروں کی فائرنگ سے چار ہلاک

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption حملہ سارونا مارکیٹ میں ہوا ہے جو اسرائیلی وزارتِ دفاع اور فوج کے مرکزی دفتر کے قریب واقع ہے

اسرائیلی پولیس کا کہنا ہے کہ تل ابیب کے ایک مرکزی شاپنگ سینٹر میں فلسطینی حملہ آوروں کی فائرنگ کے نتیجے میں چار افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔

ایمرجنسی ایمبولینس سروسز کے مطابق اس حملے میں 13 دیگر افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔

یہ حملہ سارونا مارکیٹ میں دو مقامات پر کیا گیا جو اسرائیلی وزارتِ دفاع اور فوج کے مرکزی دفتر کے قریب واقع ہے۔

پولیس کے مطابق دو حملہ آوروں کا تعلق فلسطین کے گاؤں یاتا سے تھا اور وہ اب پولیس کی تحویل میں ہیں جن میں سے ایک کی ہسپتال میں سرجری ہو رہی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ فائرنگ کا یہ واقعہ مقامی وقت کے مطابق رات ساڑھے نو بجے پیش آیا جب مارکیٹ میں لوگوں کی بڑی تعداد موجود ہوتی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption محافظوں نے حمہ آوروں کو اندر داخل ہونے سے روکا جس کی وجہ سے ایک بڑی تباہی سے بچنا ممکن ہوا

ویڈیو فوٹیج میں فائرنگ کے نتیجے میں بچاؤ کے لیے لوگوں کو ادھر ادھر بھاگتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

وہاں موجود ایک خاتون نے اسرائیلی ٹی وی چینل 10 کو بتایا کہ وہ اپنے بچے کی سالگرہ منانے کے لیے آئیں تھیں اور جب انھوں نے فائرنگ کی آواز سنی تو وہ سمجھ گئی کہ یہ دہشت گرد حملہ ہے۔

تل ابیب کے پولیس چیف چیکو ایدری نے اس واقعے کو دہشت گردی کا واقعہ قرار دیا ہے اور اس خدشے کا اظہار کیا گیا ہے تیسرے حملہ آور کا پتہ نہیں لگایا جا سکا۔

انھوں نے بتایا کہ دو دہشت گرد مارکیٹ میں داخل ہوئے اور ان کی فائرنگ کے نتیجے میں نو افراد زخمی ہوئے۔

مارکیٹ کے ڈائریکٹر نے چینل 10 کو بتایا کہ وہاں موجود محافظوں نے حمہ آوروں کو اندر داخل ہونے سے روکا جس کی وجہ سے ایک بڑی تباہی سے بچنا ممکن ہوا کیونکہ اس وقت مارکیٹ میں بہت سے لوگ موجود تھے۔

اسی بارے میں