ای میلز کے بارے میں، ایف بی آئی کی ہیلری کلنٹن سے پوچھ گچھ

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption ہیلری کے ترجمان کا کہنا ہے کہ انھوں نے رضاکارانہ طور پر ایف بی آئی کو انٹرویو دیا ہے

امریکہ میں وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف بی آئی نے صدارتی انتخابات کی دوڑ میں شامل رپبلکن پارٹی کی اُمیدوار ہیلری کلنٹن سے اُن کی ذاتی ای میلز کے مسئلے پر پوچھ گچھ کی ہے۔

ہیلری کلنٹن سے یہ سوالات اُن کے اُس دور کے بارے میں کیے گئے جب وہ سکریٹری خارجہ کے عہدے پر اُمور سر انجام دے رہی تھیں۔

ہیلری کے ترجمان کا کہنا ہے کہ انھوں نے رضاکارانہ طور پر ایف بی آئی کو انٹرویو دیا ہے۔

ایف بی آئی ہیلری کلنٹن اور اُن کے ساتھیوں سے سیکریٹری خارجہ کے دور میں ذاتی ای میل ایڈریس کے ذریعے حساس معلومات کے تبادلے کے بارے میں تحقیقات کر رہا ہے۔

مسز کلنٹن کا کہنا ہے کہ انھوں نے حساس معلومات کے لیے ذاتی ای میلز استعمال نہیں کیا ہے۔

اُن کا کہنا ہے کہ انھوں نے ذاتی ای میل ایڈریس کا استعمال اپنی سہولت کے لیے کیا کیونکہ مختلف ٹیلی فونز اور ٹیبلٹ کے بجائے بلیک بیری کا استعمال زیادہ آسان تھا۔

اگرچہ امریکی محکمۂ خارجہ کی ایک تحقیقاتی رپورٹ میں ہیلری کلنٹن سمیت دوسرے سیکریٹری خارجہ پر ای میلز کی سکیورٹی کے ناقص نظام کا الزام عائد کیا گیا ہے۔۔

امریکہ میں محکمۂ انصاف بھی اس بات کا جائزہ لے رہا ہے کہ آیا ایسا کرنا کوئی جرم کے زمرے میں آتا ہے یا نہیں۔

جمعرات کو امریکہ کی اٹارنی جرنل نے کہا تھا کہ وہ ایف بی ائی اور استغاثہ کی تحقیقات کی روشنی میں ہیلری کلنٹن پر فردِ جرم عائد کرنے یا نہ کرنے کا فیصلہ کریں گی۔

یاد رہے کہ ہیلری کلنٹن امریکہ میں صدارتی دوڑ میں رپبلکن جماعت کی ممکنہ اُمیدوار ہیں اور صدارتی اُمیدوار کے لیے اُن کی باقاعدہ نامزدگی کا اعلان جولائی کے آخر میں ہو گا۔

اسی بارے میں