امریکہ نے دو روسی سفارتکاروں کو نکال دیا

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

امریکی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ ماسکو میں امریکی سفارتکار پر حملے کے جواب میں دو روسی سفارتکاروں کو امریکہ سے نکال دیا گیا ہے۔

وزارت خارجہ کے ترجمان جان کربی کا کہنا ہے کہ دونوں سفارتکاروں کو 17 جون تک امریکہ چھوڑنے کا حکم دیا گیا تھا۔

جان کربی نے کہا کہ پچھلے ماہ ماسکو میں امریکی سفارتخانے کے قریب امریکی سفارتکار پر روسی پولیس اہلکار نے حملہ کیا۔

روس کا کہنا ہے کہ امریکی سفارتکار خفیہ ایجنسی سی آئی اے کے لیے کام کرتا تھا اور اس نے پولیس کو شناخت دکھانے سے انکار کیا تھا۔

جان کربی نے کہا ’جون 17 کو ہم نے امریکی سفارتکار پر حملے کے ردعمل میں دو روسی سفارتکاروں کو ملک سے نکال دیا۔‘

ان کا کہنا تھا کہ امریکی سفارتکار پر اس وقت حملہ کیا گیا جب انھوں نے پولیس اہلکار کو اپنی شناخت کرائی۔

روسی وزارت خارجہ کی ترجمان ماریا زخرووا نے کہا تھا کہ امریکی اہلکار سی آئی اے ایجنٹ تھے جنھوں نے اپنی شناخت کرانے سے انکار کیا اور پولیس اہلکار کے منہ پر مارا۔

’سی آئی اے اہلکار کے علاوہ وہ کوئی بھی ہو سکتے تھے ایک دہشگرد، ایک شدت پسند یا ایک خودکش حملہ آور۔‘

روس نے امریکی سفارتکار اور روسی پولیس اہلکار میں جھگڑے کی ویڈیو بھی جاری کی۔

یاد رہے کہ امریکہ نے پچھلے ماہ کہا تھا کہ روس میں امریکی سفارتکاروں کو ہراساں کرنے کے واقعات میں اضافہ ہو رہا ہے۔