امریکی ریاست لوئزیانا میں فائرنگ،’تین پولیس اہلکار ہلاک‘

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption پولیس کے ہاتھوں شہر میں ایک سیاہ فام شخص کی ہلاکت کے بعد بڑے پیمانے پر احتجاجی مظاہرے ہوئے تھے

امریکی میڈیا کے مطابق ریاست لوئزیانا کے حکام کا کہنا ہے کہ بیٹن روگ شہر میں تین پولیس اہلکار فائرنگ کے نتیجے میں ہلاک جبکہ تین زخمی ہو گئے ہیں۔

عینی شاہدین کے مطابق ایک مسلح شخص نے اندھا دھند فائرنگ کی۔

٭ سیاہ فام ہی کیوں پولیس کے نشانے پر؟

٭ ڈیلس میں مظاہرے کے دوران پولیس پر فائرنگ:تصاویر

٭ امریکہ: پولیس فائرنگ سےدو سیاہ فام ہلاک، مظاہرے جاری

پولیس نے مقامی افراد کو اس واقعے کے مقام سے دور رہنے کو کہا ہے جو کہ پولیس ہیڈ کوارٹر اور ہائی وے کے قریب واقعہ ہے۔

بتایا گیا ہے کہ ایک مشتبہ شخص کو گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ حال ہی میں پولیس کے ہاتھوں شہر میں ایک سیاہ فام شخص کی ہلاکت کے بعد بڑے پیمانے پر احتجاجی مظاہرے ہوئے تھے۔

اس کے علاوہ امریکی شہر ڈیلس میں پولیس کے ہاتھوں دو سیاہ فام افراد کی ہلاکت کے خلاف احتجاجی مظاہرے کے دوران فائرنگ کر کے پانچ پولیس اہلکاروں کو ہلاک کر دیا گیا تھا۔

امریکی صدر براک اوبامہ نے اس واقعے کی شدید مزمت کی ہے اور اسے قانون اور سکیورٹی اہلکاروں پر حملہ قرار دیا ہے۔

انھوں نے اسے بزدل لوگوں کی کارروائی قرار دیا ہے۔

خبر رساں ادارے روئٹرز نے امریکی اٹارنی جنرل لوریٹا لینچ کے حوالے سے خبر دی ہے کہ ایف بی آئی اور دیگر فیڈرل ایجنٹس جائے وقوعہ پر موجود ہیں اوران کی جانب سےبیٹن روگ میں اس واقعے کی تحقیقات میں ہر ممکن مدد فراہم کی جائے گی۔

موبائل فون سے لی جانے والی فوٹیجز میں دیکھا جا سکتا ہے کہ پولیس کی گاڑیاں جائے وقوعہ پر پہنچی اس دوران گولیاں چلنے کی آوازیں بھی سنائی دی۔

اسی بارے میں