ترک فوج کا 35 کرد جنگجو ہلاک کرنے کا دعویٰ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption گذشتہ ایک سال کے دوران فوجی آپریشن اور پی کے کے کے حملوں میں سینکڑوں افراد ہلاک ہوچکے ہیں

ترکی میں حکام کا کہنا ہے ترک فوج نے ملک کے شمال مشرقی علاقے میں ایک فوجی اڈے پر دھاوا بولنے والے 35 کرد جنگجوؤں کو ہلاک کر دیا ہے۔

یہ حملہ عراقی سرحد کے قریب صوبہ ہکاری کے ضلع چوکورجا میں ترک فوجیوں اور جنگجوؤں کے درمیان ہونے والی جھڑپوں کے چند گھنٹے بعد کیا گیا جس میں آٹھ فوجی ہلاک ہوگئے تھے۔

خیال رہے کہ گذشتہ سال جولائی میں ترکی کی فوج اور کالعدم کردستان ورکرز پارٹی (پی کے کے) کے درمیان ہونے والے جنگ بندی کا معاہدہ ختم ہوگیا تھا۔

فوج کا کہنا ہے کہ حالیہ واقعے میں پی کے کے کے جنگجوؤں کی رات کے وقت فضائی نگرانی کے ذریعے نشاندہی ہوئی جب وہ فوجی اڈے کی جانب بڑھ رہے تھے۔

فوج کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس دوران فضائی کارروائی کی گئی جس میں 23 جنگجوہ ہلاک ہوگئے، اور مزید 12 جنگجؤ زمینی لڑائی میں مارے گئے۔

خیال رہے کہ پی کے کے نے سنہ 1984 میں ترک حکام کی جانب سے کردوں کے ساتھ مبینہ امتیازی سلوک اور ناانصافیوں کے خلاف بغاوت کا اغاز کیا تھا۔

گذشہ سال جنگ بندی کے معاہدے کے اختتام کے بعد شمال مشرقی علاقوں میں فوجی آپریشن اور پی کے کے کے حملوں میں سینکڑوں افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

اسی بارے میں