اٹلی زلزلہ: عجائب گھر امداد اکٹھی کریں گے

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption 6.2 کی شدت سے آنے والے زلزلے کے نتیجے میں بہت سے چرچ اور قدیم عمارتیں بھی تباہ ہو گئی ہیں

اٹلی میں بدھ کو آنے والے زلزلے میں ہلاکتوں کی تعداد 291 ہوگئی ہے جبکہ اتوار کو ملک بھر کے سرکاری عجائب گھروں سےحاصل ہونے والی تمام آمدن زلزلے سے متاثرہ علاقوں کی بحالی کے لیے وقف کی جائے گی۔

٭ زلزلے میں ہلاک شدگان کی یاد میں یومِ سوگ

٭ زلزلے سے متاثرہ علاقوں کا فضائی جائزہ

اٹلی کے اماترس نامی دیہات اور وسطی علاقوں میں 6.2 کی شدت سے آنے والے زلزلے کے نتیجے میں بہت سے چرچ اور قدیم عمارتیں بھی تباہ ہو گئی ہیں۔

اماترس کے میئر کا کہنا ہے کہ وہ زلزلے سے تباہ علاقے کی سابقہ عظمت و شان کو بحال کرنا چاہتے ہیں۔

گدشتہ روز ملک کے وزیراعظم اور صدر دونوں نے زلزلے میں ہلاک ہونے والے 35 افراد کی آخری رسومات میں شرکت کی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption زلزلے کے نتیجے میں ثقافتی لحاظ سے اہمیت رکھنے والے 293 مقامات متاثرہ ہوئے ہی

وزیراعظم متیو رینمی نے متاثرین کے لواحقین سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم مل کر یہ فیصلہ کریں گے آگے کیسے بڑھنا ہے۔

ایک نوجوان سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ’ مایوس نہیں ہو یہ بہت ضروری ہے۔‘

اسی موقع پر بشپ ڈی ایرکول نے کہا کہ لوگوں کو زندگی کو دوبارہ شروع کرنے کے لیے اور تباہ حال علاقوں کی تعمیرِ نو کے لیے بہادر بننا ہوگا۔

وزیرِ برائے ثقافت ڈاریو فرانسسکینی کے مطابق زلزلے کے نتیجے میں ثقافتی لحاظ سے اہمیت رکھنے والے 293 مقامات متاثرہ ہوئے ہیں۔

انھوں نے عوام کے نام پیغام میں کہا کہ وہ زلزلے سے متاثر ہونے والوں سے اظہارِ یکجہتی کے لیے اتوار کو ثقافتی مقامات اور میوزیم میں جائیں، جہاں اکھٹی ہونے والی رقم سے زلزلہ متاثرین کی مدد کی جائے گی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption کل ہلاکتوں کی تعداد 290 سے زائد بتائی گئی ہے

خیال رہے کہ اس زلزلے میں ہلاک ہونے والے 290 سے زائد افراد میں سے 235 کا تعلق اماترس سے تھا۔

اٹلی کی حکومت کو سنہ 2009 میں آنے والے تباہ کن زلزلے میں 300 ہلاکتوں کے بعد سے اب ہونے والے ہلاکتوں سے بچنے کے لیے خاطر خواہ اقدامات نہ کیے جانے کی وجہ سے تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

میئر سرگیو پیروزی کا کہنا ہے کہ وہ تب تک چین سے نہیں بیٹھیں گے جب تک عمارتوں کی تعمیر کے قوانین کو سخت نہیں کیا جاتا۔

اسی بارے میں