امریکی بمبار طیاروں کا کوریا میں طاقت کا مظاہرہ

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption یہ پروازیں جنوبی اور شمالی کوریا کی سرحد سے 77 کلومیٹر دور انتہائی کم بلندی پر کی گئیں

امریکہ نہ اپنے دو سپر سانک بی ون لانسر بمبار طیارے جنوبی کوریا کے اوپر سے گزارے ہیں۔ اس کا مقصد شمالی کوریا کی جانب سے پانچویں جوہری تجربے کے بعد طاقت کا مظاہرہ کرنا تھا۔

یہ پروازیں جنوبی اور شمالی کوریا کی سرحد سے 77 کلومیٹر دور انتہائی کم بلندی پر کی گئیں۔

٭ پیانگ یانگ کو نیست و نابود کرسکتے ہیں: جنوبی کوریا

پیانگ یانگ کے مطابق اس کا حالیہ جوہری تجربہ اب تک کا اس سب سے بڑا تجربہ تھا۔

امریکہ نے شمالی کوریا کو جوہری تجربات کے تناظر میں سنگیں نتائج سے خبردار کیا ہے۔

بی ون بمبار طیارے جوہری بموں کے ساتھ ساتھ ایسے بم لے جانے کے اہل ہیں جو زیرِ زمین مورچے تک تباہ کر سکتے ہیں۔

یہ پروازیں پیر کو کی جانی تھیں تاہم موسم میں خرابی کے باعث میں ان تاخیر کی گئی۔

جنوبی کوریا کے حکام نے تنبیہ کی ہے کہ شمالی کوریا ایک اور جوہری دھماکہ کرنے کے لیے کسی وقت بھی تیار ہو سکتا ہے۔

شمالی کوریا کی جانب سے جوہری اسلحے میں اضافے کے بعد جنوبی کوریا کے دارالحکومت سیول میں ایسی اطلاعات سامنے آئیں کہ اگر شمالی کوریا کی جانب سے جوہری حملہ کرنے کا کوئی اشارہ ملا تو ایسی صورت میں جنوبی کوریا کے پاس شمالی کوریا کو مکمل طور پر تباہ کرنے والا منصوبہ ہے۔

سرکاری خبر رساں ادارے یونہپ سے بات کرتے ہوئے عسکری ذرائع کا کہنا تھا کہ پیانگ یانگ کے چپے چپے کو مکمل طور ہر بیلسٹک میزائلوں اور بموں سے تباہ کر دیا جائے گا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں