چین پاکستان راہداری منصوبہ، نو صنعتی پارکس بنائے جائیں گے

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption چین پاکستان اقتصادی راہداری کے تحت نو انڈسٹریل پارکس بنائے جائیں گے

چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے کے تحت پاکستان میں جن نو خصوصی صنعتی پارکس بنانے پر اتفاق کیا گیا تھا ان میں سے تین رواں برس مکمل کر لیے جائیں گے۔

چین میں پاکستان کے سفیر مسعود خالد نے چینی ذرائع ابلاغ کو ایک انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ چین کا صنعتی پارکس بنانے کا ریکارڈ بہت کامیاب رہا ہے اور چین پاکستان میں بھی نو انڈسٹریل پارکس بنانے کا ارادہ رکھتا ہے۔

اپ کی ڈیوائس پر پلے بیک سپورٹ دستیاب نہیں
’ذہن تعمیر کرنے سے پہلے عمارتیں بنا رہے ہیں‘

انھوں نے کہا کہ ان پارکس کی بدولت نہ صرف پاکستان میں چین اور پاکستان کے سرمایہ کاروں کے اشتراک سے صنعتی یونٹس لگائے جائیں گے اور جن سے بڑے پیمانے پر لوگوں کے لیے روزگار کے مواقع میسر آئیں گے۔

خالد مسعود کا کہنا تھا کہ ایک اندازے کے مطابق اب تک اقتصادی راہداری منصوبے سے پاکستان میں ساٹھ ہزار لوگوں کو روزگار ملا ہے۔

انھوں نے کہا کہ روزگار ملنے کے علاوہ اقتصادی راہداری منصوبے کے تحت سڑکوں اور دیگر سہولیا ت کی تعمیر سے ہونے والے معاشی سرگرمی کی وجہ ملک کی فی کس آمدنی میں بھی اضافہ ہوگا اور لوگوں کی قوت خرید بھی بڑھے گی۔

اقتصادی راہداری منصوبے کے تحت پاکستان میں جاری منصوبوں کی تفصیلات فراہم کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ پاکستان میں اس وقت بائیس چھوٹے بڑے منصوبوں پر تعمیراتی کام جاری ہے اور یہ تکمیل کے مختلف مراحلے ہیں۔

چین اور پاکستان کے مضبوط تعلقات کے بارے میں بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ معیشت کے علاوہ دونوں ملکوں کے درمیان سماجی شعبوں میں بھی تعلقات بڑھتے جا رہے ہیں۔انھوں نے بتایا کہ بائیس ہزار پاکستانی طلب علم سائنس اور ٹیکنالوجی سمیت مختلف مضامین میں چین میں تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔

اسی بارے میں