بھنسالی پر حملے کے خلاف بالی وڈ کا سخت رد عمل

دیپیکا، سنجے لیلا بھنسالی تصویر کے کاپی رائٹ INSTAGRAM/DEEPIKA PADUKONE
Image caption بالی وڈ کے فلم ساز سنجے لیلا بھنسالی جے پور میں اپنی فلم 'پدماوتی' کی شوٹنگ کر رہے ہیں

انڈیا کے شہر جے پور میں بننے والی فلم 'پدماوتی' کے سیٹ پر فلم ہدایت کار سنجے لیلا بھنسالی کے ساتھ ہونے والی مار پیٹ پر بالی وڈ نے سخت رد عمل کا اظہار کیا ہے۔

کئی فلم ہدایت کاروں اور فنکاروں نے ان کی حمایت میں ٹویٹس کی ہیں۔

بالی وڈ کے فلم ساز سنجے لیلا بھنسالی جے پور میں اپنی فلم 'پدماوتی' کی شوٹنگ کر رہے ہیں۔ اسی فلم کے سیٹ پر سخت گیر ہندو تنظیموں نے ان پر حملہ کیا اور مار پیٹ کی تھی۔

اس فلم میں اداکارہ دیپکا پاڈوکون ملکہ پدماوتی کا کردار ادا کر رہی ہیں اور رنویر سنگھ علاء الدین خلجی کے روپ میں جلوہ گر ہوئے ہیں۔

فلم ہدایت کار انوراگ کشیپ نے اس حملے کے رد عمل میں لکھا: 'کیا ایک بار پوری فلم انڈسٹری متحد ہوکر وہ گدھا بننے سے انکار کر سکتی ہے جس پر تمام بیوقوف سواری کرتے ہیں؟'

Image caption اس فلم میں اداکارہ دیپکا پاڈوکون ملکہ پدماوتي کا کردار ادا کر رہی ہیں اور رنویر سنگھ علاء الدین خلجی کے کردار میں ہیں

ایک اور ٹویٹ میں کشیپ نے لکھا: 'کرنی سینا پر شرم آتی ہے، آپ کی وجہ سے مجھے راجپوت ہونے پر شرم آ رہی ہے۔ بغیر ریڑھ کی ہڈی والے ڈرپوک لوگ۔'

انھوں نے اپنی ایک دیگر ٹویٹ میں یہ بھی لکھا کہ 'ہندو دہشت گردی ٹوئٹر سے نکل کر حقیقی دنیا میں آ چکی ہے ۔۔۔ ہندو انتہا پسندی اب کوئی افسانہ نہیں رہا۔'

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter
Image caption ہندو انتہا پسندی اب ٹویٹر کی دنیا سے نکل کر اصل دنیا میں پہنچ چکی ہے

اداکار ریتک روشن نے ٹویٹ کیا: 'بھنسالی سر، میں آپ کے ساتھ کھڑا ہوں۔ یہ سب کتنا اشتعال انگیز ہے۔'

ایک اور ٹویٹ میں روشن نے لکھا: 'کیا کوئی بھی کسی کے کام کی جگہ میں اس طرح گھس سکتا ہے اور ان کے ساتھ مار پیٹ کر سکتا ہے؟ بس اس لیے کہ انھوں نے طے کر لیا ہے کہ انھیں ان کا کام پسند نہیں ہے۔ مجھے بہت غصہ آ رہا ہے۔'

کرن جوہر نے اس بارے میں ایک کے بعد ایک کئی ٹویٹ کیے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter
Image caption ہرتیک روشن نے بھی اس واقعے پر سخت نارضگی ظاہر کی ہے

انھوں نے لکھا: 'سنجے لیلا بھنسالی کے ساتھ جو ہوا اس سے ناخوش ہوں۔ اپنے لوگوں اور ساتھیوں کے ساتھ ایک انڈسٹری کے طور پر متحد ہو کر کھڑے ہونے کا وقت آ گیا ہے۔ فلم کی شوٹنگ اور ریلیز کے دوران کئی طرح کی مشکلات سے گزرنے کے تجربات کے ساتھ میں سنجے لیلا بھنسالی کے جذبات سمجھ سکتا ہوں۔ میں ان کے ساتھ کھڑا ہوں۔'

ایک اور ٹویٹ میں انھوں نے لکھا: 'جو سنجے لیلا بھنسالی کے ساتھ ہوا اسے بھول نہیں پا رہا ہوں۔ بہت غصہ آ رہا ہے اور بے بس محسوس کر رہا ہوں۔ یہ تو ہمارا مستقبل نہیں ہو سکتا۔'

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter
Image caption کرن جوہر کا کہنا ہے کہ اب وقت آگیا ہے جب فلم انڈسٹری کو متحد ہونے کی ضرورت ہے

فرحان اختر نے ٹویٹ کیا: 'فلم انڈسٹری کے ساتھیوں، اگر ہم بار بار ہونے والے ڈرانے دھمکانے کے ان واقعات کے خلاف اب متحد نہیں ہوئے تو حالات بدتر ہوتے جائیں گے۔'

فرحان کی بات سے اتفاق کرتے ہوئے کرن جوہر نے لکھا: 'ہماری انڈسٹری کے کسی بھی رکن کو اس واقعے پر خاموش نہیں رہنا چاہیے۔ یہ متحد ہونے کا وقت ہے نہ کہ بےحسی کا۔'

اداکارہ عالیہ بھٹ نے لکھا: 'پدماوتی کے سیٹ پر جو ہوا وہ مضحکہ خیز ہے۔ تخلیقی آزادی اور سنیما لائسنس جیسی بھی کوئی چیز ہوتی ہے۔ فنکار غنڈوں کی کرم فرمائی پر تو نہیں رہ سکتا۔'

تصویر کے کاپی رائٹ Twitter
Image caption رام گوپال ورما کے مطابق جو ملک اپنے فنکاروں کی حفاظت نہیں کر سکتا وہ ملک کہلانے کے لائک نہیں ہے

فلم ڈائریکٹر رام گوپال ورما نے لکھا: 'بھنسالی ایک فنکار ہیں اور کوئی بھی ملک جو اپنے فنکاروں کو غنڈوں سے محفوظ نہیں ر کھ سکتا وہ اپنے آپ کو ملک کہلانے کا حقدار نہیں ہے۔'

بالی وڈ سے وابستہ دیگر شخصیات نے نے بھی بھنسالی کے ساتھ یک جہتی کا اظہار کرتے ہوئے ٹویٹس کی ہیں اور ان کے ساتھ ہمدردی ظاہر کی ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں