حسینۂ عالم کے لیے مقابلہِ حسن، تصاویر

فلپائن کے شہر منیلا میں منعقد ہونے والے اس مس یونیورس مقابلے میں پارسی نژاد فرانسیسی حسینہ آئرش مترینی کو کائنات کی سب سے خوبصورت خاتون جج کیا گيا اور اس کے لیے ان کی تاج پوشی کی گئی۔

آئرش متیرینی

،تصویر کا ذریعہReuters

،تصویر کا کیپشن

30 جنوری کو فلپائن کے شہر منیلا میں منعقد ہونے والے مس یونیورس مقابلے میں پارسی نژاد فرانسیسی حسینہ آئرش مترینی نے 68ویں عالمی مقابلہ حسن کو جیتا۔

،تصویر کا ذریعہReuters

،تصویر کا کیپشن

سٹیج پر اس اعلان کے بعد اس بار فرانس کی آئرش نے یہ خطاب جیتا ہے انھیں سابق حسینہ عالم پیا رتزبیک نے تاج پہنایا

،تصویر کا ذریعہReuters

،تصویر کا کیپشن

24 سالہ آئرش میتیرینی پیشے سے ڈینٹل سرجن ہیں اور وہ مس فرانس کا خطاب جیتنے کے بعد عالمی مقابلے میں اتری تھیں۔

،تصویر کا ذریعہReuters

،تصویر کا کیپشن

مس ہیتی ریقویئل، (دائیں) اس مقابلے میں دوسرے نمبر پر رہیں اور 23 سالہ مس کولمبیا اینڈریہ ٹووؤر (بائیں) تیسرے نمبر پر رہیں۔

،تصویر کا ذریعہReuters

،تصویر کا کیپشن

68واں عالمی مقابلہ حسن کے اعلان سے عین قبل سٹیج پر آئرش میرینی میزبان سے بات چیت کرتے ہوئے

،تصویر کا ذریعہEPA

،تصویر کا کیپشن

24 سالہ دانت کی ڈاکٹر کا ارادہ ہے کہ انھیں جو مس یونیورس کے خطاب سے شہرت ملی ہے وہ اس کا استعمال دانتوں اور منہ کی صفائی کے فروغ کے لیے استعمال کریں گی۔

،تصویر کا ذریعہReuters

،تصویر کا کیپشن

مس یونیورس کے مقابلے میں دنیا بھر کے کئی ممالک کی حسیناؤں نے شرکت کی، مس آئرس انھیں حسیناؤں کے ساتھ فوٹو بنواتے ہوئے۔

،تصویر کا ذریعہReuters

،تصویر کا کیپشن

خطاب جیتنے کے بعد ہونی والی کانفرنس کے اختتام پر نئی مس یونیورس فلپائن کے معروف تاجر لوئیس چاوت سگسن کے ساتھ خوشگوار لمحات شیئر کرتے ہوئے

،تصویر کا ذریعہReuters

،تصویر کا کیپشن

مس ہیتی ریقویئل، مس فرانس آئرش اور مس کولمبیا اینڈریہ آخر مرحلے میں نتائج کا انتظار کرتے ہوئے