'فحش شاعری' کی شکایات، ملائشیا میں معروف گانے ڈسپسیٹو پر پابندی

ڈسپسیٹو تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

ملائشیا میں سرکاری براڈکسٹرز پر مشہور گانے ڈسپسیٹو چلانے پر پابندی عائد کی گئی ہے کیونکہ حکام کے مطابق اس گانے میں 'فحش' شاعری کی وجہ سے شکایات موصول ہونے کے بعد فیصلہ کیا گیا۔

ایک سینیئر وزیر نے کہا کہ اس گانے کہ ری مکس جس میں کینیڈا کے گلوکار جسٹن بیبر شامل ہیں کو غیر اسلامی سمجھا جا رہا ہے۔ ملائشیا میں سنسرشپ کے سخت قوانین ہیں اور ماضی میں حساس مواد پر پابندی عائد کی جاتی رہی ہے۔

پورٹوریکن گلوکار لوئیس فونسی کا گانا ڈسپسیٹو سب سے زیادہ سٹریم کیا جانے والا گانا بن چکا ہے۔ اسے پچھلے چھ ماہ میں دنیا بھر میں 4 عشاریہ 6 بلین بار سٹریم کیا گیا۔

ملائشیا کے وزیر برائے اطلاعات و نشریات صالح سعید کیرواک نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ 'ڈسپسیٹو کسی بھی سرکاری بروڈکاسٹ سٹیشن پر نہیں چلے گا کیونکہ ہمیں عوام کی طرف سے شکایات ملی ہیں۔'

انھوں نے اس گانے کے بارے میں مزید کہا کہ 'اس کی شاعری سننے کے قابل نہیں۔' صالح سعید کیرواک نے نجی چینلزسے کہا ہے کہ وہ اپنی سنسرشپ خود کریں۔

ملائشیا میں حزب اختلاف کی 'پارٹی امانہ نیگارا' جو اپنے آپ کو اسلام پسند پارٹی کے طور پر پیش کرتی ہے نے حکومت سے اس ہسپانوی گانے پر اس کے ’فحش‘ مواد کی وجہ سے پابندی لگانے کے لیے کہا تھا۔

پارٹی کے خواتین ونگ کی سربراہ اتریزہ عمر نے اس موسیقی کو 'فحاشی' سے تشبیح دیا اور اسے بچوں کے لیے غیر موزوں قرار دیا اور کہا کہ ایسا مواد معاشرے کے لیے خطرناک ثابت ہوسکتا ہے۔

مشہور ہونے والا گانا جس میں پورٹو ریکن ریپر ڈیڈی ینکی بھی شامل تھے سوشل میڈیا پر کافی مقبول ہوا اور جنوری میں ریلیز ہونے کے بعد وائرل ہوا۔

اس کی مقبولیت میں اس وقت مزید اضافہ ہوا جب اپریل میں مشہور گلوکار جسٹن بیبر اس گانے کے ایک ری مکس میں نظر آئے۔

ہسپانوی زبان کے اس گانے کا ترجمہ 'آہستہ' ہے اور کہا جا رہا ہے کہ یہ ایک طرح سے گانے کے گلوکار فونسی کے بہکانے کی رفتار ہے۔

جب یہ گانا سب سے زیادہ سٹریم کیے گئے گانے کے طور پر سامنے آیا تو اس کے گلوکار نے کہا کہ 'میں چاہتا تھا کہ لوگ ناچیں۔۔ اور ایک ایسا گانا ہو جو مختلف ثقافتوں کو جوڑے۔۔ اور یہ ہی بات میرے لیے باعث فخر ہے۔'

اسی بارے میں