خدا کا شکر ہے ایشوریہ بچ گئیں

ایشوریہ رائے تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption ایشوریہ رائے کی ہالی وڈ کے فلمساز ہاروی وائن سٹین سے کئی تقاریب میں ملاقات ہو چکی ہے

ہالی وڈ کے معروف فلم پروڈیوسر ہاروی وائن سٹین آج کل سرخیوں میں ہیں ان کے خلاف ہالی وڈ کی کئی معروف اداکاراؤں نے جنسی ہراسانی کے الزامات عائد کیے ہیں جس کے بعد وہ خاصی مشکل میں پھنس چکے ہیں۔

امریکی اداکارہ اینجلینا جولی، گوینتھ پالٹرو اور جنیفر لورینس سمیت دیگر کئی اداکاراؤں نے جو تفصیلات بیان کیں وہ شرمناک ہیں۔ اس واقعے کے سامنے آنے کے بعد ایک بار پھر شوبز کی جگمگاتی روشنیوں کے پیچھے چھپی بدنما حقیقتوں کا پردہ فاش ہوا ہے۔

٭ کنگنا اور رتک کے تنازعے میں روز نیا موڑ

٭ شیشے کے گھر میں رہ کر دوسروں پر پتھر

ان میں سے زیادہ تر اداکارائیں اپنے کریئر کے ابتدائی دور میں تھیں اور ہاروی وائن سٹین جیسی بااثر شخصیت کی مبینہ زیادتیوں کے خلاف آواز نہیں اٹھا سکیں۔ جس طرح کے الزامات سامنے آ رہے ہیں اس سے تو ایسا لگتا ہے کہ وائن سٹین نے اپنے راستے میں آنے والی کسی خاتون کو نہیں بخشا۔

خبر ہے کہ ایشوریہ رائے بچن کی انٹرنیشنل ٹیلنٹ مینیجر کے مطابق ہاروی وائن سٹین ایشوریہ رائے سے بھی تنہائی میں ملنے کے خواہش مند تھے۔

ایشوریہ تقریبات کے دوران وائن سٹین سے کئی مرتبہ مل چکی تھیں اور وائن سٹین نے ان کی مینیجر سے سوال بھی کیا تھا کہ وہ کس طرح ایشوریہ سے تنہائی میں مل سکتے ہیں۔ لیکن ایشوریہ کی مینیجر نے یہ نوبت نہیں آنے دی۔ شکر ہے خدا کا ایشوریہ رائے ان کا شکار ہونے سے بچ گئیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption سر ووین رچرڈز اپنی بیٹی مسابا کے ساتھ یہاں دیکھے جا سکتے ہیں

حال ہیں میں انڈیا کی سپریم کورٹ نے دیوالی کے موقعے پر پٹاخوں کی فروخت پر پابندی کا اعلان کیا ہے۔ فیصلے سے کچھ لوگوں کے اقتصادی تو کسی کے مذہبی جذبات مجروح ہوئے۔

اب جن لوگوں نے اس فیصلے کا خیر مقدم کرنے کی غلطی کی تو انھیں اس کا خمیازہ بھی بھگتنا پڑا۔ اس حوالے سے سوشل میڈیا پر سب سے زیادہ مشہور ڈیزائنر مسابا گپتا کو نشانہ بنایا گیا۔

مسابا اداکارہ نینا گپتا اور ویسٹ انڈیز کے کرکٹر سر ووین رچرڈز کی بیٹی ہیں۔ نینا گپتا اور ووین رچرڈز کی شادی نہیں ہوئی تھی۔ مسابا نے اس فیصلے پر ٹویٹ کرتے وقت شاید سوچا بھی نہیں ہو گا کہ انھیں کس طرح کی ذہنیت کا سامنا ہو گا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption جوہی چاولہ نے عامر خان کے ساتھ فلم 'قیامت سے قیامت تک' کے ساتھ اپنے کریئر کا آغاز کیا تھا

ٹوئٹر پر لوگوں نے مسابا کو صرف گالیاں دے کر ہی نہیں بخشا بلکہ ان کے وجود پر ہی سوال اٹھائے اور انھیں 'ناجائز' کہہ کر پکارا گیا۔

اداکارہ جوہی چاولہ بھی ایسے ہی لوگوں کے عتاب کا شکار ہوئیں۔ انھوں نے بھی اس فیصلے کا خیر مقدم کرنے کی غلطی کی تھی۔

ٹیکنالوجی اور سوشل میڈیا کے اس دور سے کبھی کبھی خوف آتا ہے کیونکہ اس کے ذریعہ کوئی بھی کبھی بھی کہیں بھی آپ کو ذلیل و خوار کر سکتا ہے اور وہ بھی وہ جسے آپ نے نہ کبھی دیکھا نہ جانا۔

ایسے میں اداکارہ ایشا گپتا کی بات پر مجھے بہت ہنسی آئی ان کا کہنا ہے کہ کاش سوشل میڈیا پر ٹرول کرنے والوں کو کوئی نوکری مل جائے اور وہ اپنی روزی روٹی کمانے میں مصروف ہو جائیں۔

ایشا گپتا بڑی معصوم ہیں۔ شاید نہیں وہ جانتیں کہ اس وقت انڈیا میں شوسل میڈیا پر ٹرولنگ کرنا بھی ایک کام ہے۔ یقین نہ آئے تو بھکتوں سے پوچھ لیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں