پرینکا چوپڑا: اقوامِ متحدہ کی سفیر جنگ کی حمایت کیسے کر سکتی ہیں؟

یونیسیف تصویر کے کاپی رائٹ Instagram/@priyankachopra
Image caption پرینکا دسمبر 2016 سے یونیسیف کی ’گڈ ول‘ ایمبیسیڈر ہیں

بالی وڈ اور ہالی وڈ کی اداکارہ پرینکا چوپڑا اقوامِ متحدہ کے ادارے یونیسیف کی ’گڈ ول‘ ایمبیسیڈر بھی ہیں اور اس حیثیت میں ان سے توقع کی جاتی ہے کہ وہ انسان دوستی اور غیر جانبداری کا پیغام پوری دنیا تک پہنچائیں۔

لیکن انڈیا اور پاکستان کے درمیان حالیہ کشیدگی کے تناظر میں انڈیا کی طرف سے پاکستان پر کیے گئے فضائی حملوں کی حمایت پر، پرینکا کو خاصی تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

پرینکا یونیسیف کی ’گڈ ول‘ ایمبیسیڈر کے طور پر جنگ سے متاثرہ شام اور روہنگیا کے مہاجرین کیمپوں کے دورے بھی کر چکی ہیں، لیکن گذشتہ منگل کو وہ انڈیا کی پاکستانی فضائی حدور کی خلاف ورزی اور حملے کی حمایت کرتی دکھائی دیں۔

انڈین آرمڈ فورسز کا ہیش ٹیگ استعمال کرتے ہوئے انہوں نے ٹویٹ کیا ’جے ہند‘۔

یہ بھی پڑھیے

’چائے پلائیں مگر جنگ نہ کریں‘

سوشل میڈیا: کیا گھمسان کا رن پڑا ہے؟

دو ہمسائیوں کے درمیان امن کی بڑھتی خواہش

اقوامِ متحدہ کی طرف سے ’گڈ ول ایمبیسیڈر‘ کے عہدے کے لیے دیے گئے قواعد کے مطابق ان سفیروں سے توقع کی جاتی ہے کہ وہ ’اقوام متحدہ کی غیر جانبدارای اور آزادی کا احترام کرتے ہوئے ایسے ہر کام سے اجتناب کریں گے جو اقوام متحدہ کی منفی عکاسی کرے۔‘

سوشل میڈیا صارفین کو پرینکا کی انڈین فوجی حملے کی یہ حمایت کچھ پسند نہیں آئی۔ اور بے شمار صارفین یواین اور یونیسیف کو ٹیگ کر کے پرینکا کو ’گڈ ول‘ ایمبیسیڈر کے عہدے سے ہٹانے کا مطالبہ کرتے نظر آئے۔

ایسے ہی افراد میں سے ایک فاطمہ ہیں۔ فاطمہ نے یو این کو ٹیگ کرتے ہوئے ٹویٹ کیا ’یو این کیا آپ پرینکا سے سفارت کا عہدہ واپس لے سکتے ہیں؟‘

وہ مذید کہتی ہیں کہ جو سلیبریٹیز جنگ کے شعلوں کو ہوا دیں، انھیں کسی فورم ہر انسانی حقوق کی باتیں کرنا زیب نہیں دیتا۔

فاطمہ نے تو یہاں تک کہا کہ پرینکا کو جو کہ بظاہر کہتی ہیں کہ میں بچوں کے حقوق کے لیے کام کرتی ہوں، بچوں پر جنگ کے اثرات کی تعلیم حاصل کرنی چاہیے۔

پاکستانی اداکارہ آرمینہ خان پرینکا کی ٹویٹ پر حیران نظر آئیں اور ان سے پوچھا ’کیا آپ یونیسیف کی گڈ ول ایمبیسیڈر نہیں ہیں؟‘

آرمینہ نے پھر سوشل میڈیا صارفین سے مطالبہ کیا کہ پرینکا کی اس ٹویٹ کا سکرین شاٹ لے کر رکھیں اور آئندہ جب کھبی وہ امن اور خیر سگالی کی باتیں کریں تو انھیں ان کا دہرا معیار یاد کروائیں۔

اور تو اور، کچھ لوگوں نے تو انہیں اس عہدے سے ہٹانے کے لیے ’پٹیشن‘ تک شروع کر دی، جس پر تیس ہزار سے زائد لوگ دستخط کر چکے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ change.org

اسی بارے میں